Web
Analytics
Rasa News ::رسانيوز ايجنسي - امریکی اور اسرائیلی پالیسیاں خطے کیلئے خطرناک ہیں
Wednesday, December 12, 2018 -
سرویس : > ريورٹ
وقت : 3/28/2018-6:48 PM
شناسه خبریں: 435437
 
امریکی اور اسرائیلی پالیسیاں خطے کیلئے خطرناک ہیں
سیمینار سے خطاب میں سابق ایرانی وزیر خارجہ کمال خرازی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے ایران بھارت تعلقات پر خدشات سے بخوبی آگاہ ہیں، ہم سمجھتے ہیں کہ ان خدشات کا سدبات ہونا چاہیئے، ایران پاکستان کو دعوت دیتا ہے کہ وہ چین کے ساتھ ملکر چاہ بہار پر کام کرے، اس طرح یہ خدشات خودبخود ختم ہوجائیں گے، سی پیک منصوبے کا خیرمقدم کرتے ہیں اور پاکستان کے ساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں، چاہ بہار اور گوادر پورٹ دو سسٹر بندرگاہیں ہیں، دونوں کا آپس میں کوئی مقابلہ نہیں ہے۔

 رپورٹ: این اے بلوچ

سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی اور تحریک انصاف کی رکن قومی اسمبلی شیریں مزاری نے کہا ہے کہ امریکہ، بھارت اور اسرائیل کٹھ جوڑ خطے کی سیکیورٹی کیلئے بڑا خطرہ ہے۔ ایران کے سابق وزیر خارجہ ڈاکٹر کمال خرازی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے چاہ بہار اور بھارت سے تعلقات کے حوالے سے تحفظات سے آگاہ ہیں، پاکستان چین کے ساتھ ملکر چاہ بہار میں کام کرے تو ہم خوش آمدید کہیں گے، اس طرح پاکستان کے خدشات بھی دور ہو جائیں گے۔ پاکستان اور خطے کی سیکیورٹی کے عنوان سے منعقدہ سیمینار سے خطاب میں سابق چئیرمین سینیٹ سینیٹر میاں رضا ربانی کا کہنا تھا کہ ٹرمپ کے پہلے پالیسی بیان میں ایران اور شمالی کوریا کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا تاہم بعد میں امریکہ نے افغانستان میں اپنی ناکامیوں کا سارا ملبہ پاکستان پر ڈال دیا۔ رضا ربانی نے کہا کہ پاکستان پہلے ہی افغان مہاجرین اور افغان معاشی صورتحال کا سارا بوجھ برداشت کر رہا ہے، ماضی میں افغان جہاد کا حصہ بن کر پاکستان میں منشیات کلچر اور اسلحہ کی لعنت نے ہمارے معاشرے کو گھیر لیا۔

رضا ربانی نے کہا کہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرکے ٹرمپ انتظامیہ نے نہ صرف عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی بلکہ تمام اخلاقیات کی بھی دھجیاں اڑائی دی گئیں۔ امریکہ کے اس فیصلے سے نئے انتفادہ تحریک کا آغاز ہوگا۔ سابق چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ خطے میں بھارت، اسرائیل اور امریکہ کی شکل میں نیا نیاگٹھ جوڑ وجود میں آچکا ہے۔ بھارت خطے میں اپنے آپ کو تھانیدار سمجھتا ہے تاہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ پاکستان کسی صورت بھارت کی بالادستی قبول کو نہیں کریگا۔ امریکہ بھارت کو چین کے خلاف بھی استعمال کر رہا ہے۔ رضا ربانی نے کہا کہ بھارت سمیت تمام ہمسایوں سے برابری کی سطح پر تعلقات کے خواہاں ہیں، سابق چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ بھارت اور اسرائیل دونوں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کر رہے ہیں، بھارت مقبوضہ کشمیر میں بیلٹ گنوں کے ذریعہ جوانوں کو بینائی سے محروم کر رہا ہے تو اسرائیل نے فلسطین میں جبرو واستبداد کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ رضا ربانی کا کہنا تھا کہ پاک ایران تجارت کو فروغ دینا چاہئے اور آئی پی گیس منصوبہ کی جلد تکمیل ہونی چاہیئے، اس منصوبے کی تاخیر کا ہمیں احساس ہے۔

سیمینار سے خطاب میں ایران سے آئے ہوئے مہمان سابق ایرانی وزیرخارجہ اور آیت اللہ خامنہ ای کے مشیر خاص ڈاکٹر کمال خرازی کا کہنا تھا کہ روس کی جارحیت سے قبل پاک ایران تعلقات مثالی تھے، جب پاکستان نے افغانستان میں امریکہ کے ساتھ ملکر جنگ لڑی تو دونوں ملکوں کے درمیان سرد مری چھا گئی اور یوں بداعتمادی کی فضاء نے ڈیرے ڈال دئیے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ مملک خطے میں عدم استحکام پیدا کر رہے ہیں، مشرق وسطیٰ میں پاکستان کا کردار غیرجانبدارانہ ہے اور ہم اس اقدام کو سراہتے ہیں، باوجود اس کے پاکستان نے اپنی فوجیں سعودی عرب بھیجی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی فوجی اتحاد میں ایران کو مدعو نہیں کیا گیا اور ایران یہ سمجھتا ہے کہ یہ اتحاد دراصل ہمارے خلاف بنایا گیا ہے۔ سابق ایرانی وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کا دنیا اور خطے میں کلیدی کردار ہے، پاک ایران اتحاد خطے کی سلامتی و استحکام کے لئے ناگزیر ہے۔

کمال خرازی کا کہنا تھاکہ ایران بھارت تعلقات پر پاکستان کے خدشات سے بخوبی آگاہ ہیں، ہم سمجھتے ہیں کہ ان خدشات کا سدبات ہونا چاہیئے، ایران پاکستان کو دعوت دیتا ہے کہ وہ چین کے ساتھ ملکر چاہ بہار پر کام کرے، اس طرح یہ خدشات خودبخود ختم ہو جائیں گے، سی پیک منصوبے کا خیرمقدم کرتے ہیں اور پاکستان کے ساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں، چاہ بہار اور گوادر پورٹ دو سسٹر بندرگاہیں ہیں، دونوں کا آپس میں کوئی مقابلہ نہیں ہے۔ سابق ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ گیس پائپ لائن، ویزا نرمی اور تجارت کے فروغ سے ہی دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر ہوں گے۔ سابق ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کو ایران کے خدشات بھی دور کرنا ہوں گے، سرحدی صورتحال کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے، پاکستان نے ایران، روس اور چین کے ساتھ ملکر اقتصادی اور سیکیورٹی بلاک بنانے کی تجویز دی تھی، ہم اس تجویز کا خیرمقدم کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ اس پر معاملات کو آگے بڑھنا چاہیئے۔ خطے کی سیکیورٹی کیلئے باہمی اعتماد کی فضاء کو مزید بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔

تقریب سے خطاب میں ایرانی سفیر مہدی ہنردوست کا کہنا تھا کہ پاک ایران تعلقات کا مستقبل تابناک ہے، دونوں ممالک کے درمیان تمام شعبوں میں تعاون بڑھانے کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ دونوں ملکوں کو دہشتگردی جیسے عفریت کا مشترکہ سامنا ہے جس سے ملکر ہی نمٹنا جا سکتا ہے۔ اس سے قبل سیمینار سے خطاب میں ڈاکٹر شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ جب مشرق وسطیٰ میں مسائل پیدا ہوئے اور امریکی پلان نافذ العمل ہونا شروع ہوا تو واحد ملک ایران ہی تھا جو تن تنہا امریکی اہداف کے مقابل میں لڑ رہا تھا اور ڈٹ گیا، یوں امریکی اہداف کے مقابلے میں ایران آہنی دیوار ثابت ہوا، یہ بات بھی واضح ہو چکی ہے کہ سعودی عرب امریکہ کے ساتھ اتحادی ملک بن چکا ہے جو امریکی اہداف کو آگے بڑھا رہا ہے، اس وقت بادشاہتیں خطرات سے دوچار ہیں، لیبیا اور مصر کی صورتحال سب کے سامنے ہے، گلف کونسل تنازعہ بتا رہا ہے کہ جلد دیگر ممالک میں بھی بادشاہتوں کا خاتمہ ہوگا۔

ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا کہ مشرق وسطیٰ کے حوالے سے پاکستان کا کردر غیرجانبدار تھا، یمن کے معاملے پر پارلیمنٹ کی قرار داد ایک تاریخی اقدام تھا لیکن اب آہستہ آہستہ یہ قرارداد ردی کی ٹوکری کی نذر ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔ تحریک انصاف کی رہنماء کا کہنا تھا کہ اس وقت خطے میں امریکہ اپنے اہداف کو بھارت کے ذریعے آگے بڑھا رہا ہے، ایران یہ طے کرلے کہ وہ بھارت کے ساتھ تعلقات قائم کرکے کہیں بلواسطہ طور پر امریکہ کی مدد تو نہیں کر رہا؟۔ بھارت، اسرائیل اور امریکہ کے کٹھ جوڑ نے خطے کی سیکیورٹی کو داو پر لگا دیا ہے، اس وقت امریکہ انڈیا کے ذریعہ اپنے مفادات کا تحفظ کر رہا ہے۔ شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ پاکستان بھی فیصلہ کرے کہ وہ دونوں سائیڈوں سے کھیلے گا یا ایک طرف سے، دہری پالیسی کو ترک کرنا ہوگا۔ /۹۸۸/ ن۹۴۰

منبع:‌اسلام ٹائمز

ختم خبر

رسا نیوز ایجنسی

نظریہ
نام :
ایمیل:
پیغام :
مندرجہ ذیل حروف کو باکس میں تحریر کریں:
= ۹ + ۹
ارسال
تبصرہ
اشاعت: 0
زیر التوا کا جائزہ لینے کے: 0
غیر ریلیز: 0
11/24/2018
کلایہ دھماکہ، پس پردہ حقائق
اورکزئی اور اطراف میں خودکش حملوں کے اکا دکا واقعات اس سے پہلے بھی دیکھنے میں آئے ہیں۔ جن میں سے کئی ایک کو ناکام بنایا جاچکا ہے۔ چند سال قبل اس علاقے کی سکیورٹی کی ذمہ داری مقامی تنظیموں اور رضاکارو...
11/20/2018
پاکستان کے شیعوں نے اپنی مظلومت کو قدرت میں بدل دیا| شیعہ پارٹیوں نے پاکستان میں سعودیہ کے سیاسی اور دینی بازو توڑ دئے
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے جنرل سکریٹری نے یہ کہتے ہوئے کہ پاکستان میں شیعوں کو امام خمینی رہ اور ایران کی محبت میں تہ تیغ کیا گیا کہا: عمران خان، یمن میں جنگ کے مخالف اور سیاسی مذاکرات کے حامی ہیں ۔
3/28/2018
امریکی اور اسرائیلی پالیسیاں خطے کیلئے خطرناک ہیں
سیمینار سے خطاب میں سابق ایرانی وزیر خارجہ کمال خرازی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے ایران بھارت تعلقات پر خدشات سے بخوبی آگاہ ہیں، ہم سمجھتے ہیں کہ ان خدشات کا سدبات ہونا چاہیئے، ایران پاکستان کو دعوت دیت...
10/5/2015
آل سعود نے ایرانی حجاج کی فہرست صھیونیوں کو ارسال کی / «امریکا مردہ باد» کے نارہ کے بعد یمن کیخلاف جنگ کا آغاز ہوا
رسا نیوز ایجنسی - تیونس کے دانشمند نے سانحہ مِنٰی کو اسلامی جمھوریہ ایران کے خلاف سازش جانا اور کہا: ہماری سماعتوں کے بناء پر ایرانی حجاج کی فہرست اعمال حج کی انجام دہی کے لئے سعودیہ پہونچنے سے پہلے ہ...
8/3/2015
اسکردو کے عشرہ اسد کے عاشوراء میں ہزاروں عزاداروں کی شرکت
رسا نیوز ایجنسی - اسکردو پاکستان کے عشرہ اسد کے عاشورا کے جلوس عزاء میں ہزاروں عزاداران نے شرکت کر کے نواسہ رسول اور قافلہ حریت کے سید و سالار حضرت امام حسین اور آپ کے اصحاب باوفا کو خراج عقیدت پیش کی...
4/8/2015
سعودی یمن تنازع کا حل جنگ نہیں مذاکرات و مصالحت ہے
رسا نیوز ایجنسی - ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے اراکین نے اپنی پریس کانفرس میں جو ملی یکجہتی کونسل کے ڈپٹی جنرل سکریٹری ثاقب اکبر، جمعیت علماء اسلام (ف) رہنما کے ڈاکٹر عابد روف اورکزئی، شیعہ علماء کونسل...
11/22/2014
انتہا پسندی اور تکفیریت کیخلاف عالمی کانفرنس
رسا نیوز ایجنسی - اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ تکفیریت کا ہر وار مسلمانوں پر ہی پڑتا ہے، تکفیری عناصر مسلمانوں ہی کو بموں اور گولیوں کا نشانہ بنا رہے ہیں ، تمام تر دہشت گردی کا ہدف مسلمان بنے ہوئے ہیں، م...
10/6/2014
اتحاد اسلامی دنیا کی اہم ضرورت / عید الاضحی ہوا نفس کی قربانی کا دن ہے
رسا نیوز ایجنسی – شھر تبریز کے امام جمعہ نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ عید الاضحی مسلمانوں کا نقطہ مشترک ہے کہا: دھشت گرد اور شدت پسند گروہوں سے مقابلہ کے لئے اسلامی اتحاد ضروری ہے ۔
1/15/2014
شیعوں نے جلوسوں محمدی کا شاندار استقبال کیا
رسا نیوز ایجنسی - پاکستان کے مختلف شھروں کے شیعوں نےعید میلاد النبی(ص) کے جلوسوں کا شاندار استقبال اور شرکت کر کے شیعہ و سنی اتحاد کی بے مثال رسم قائم کردی ۔
8/6/2013
عالم اسلام ایک خاندان کی مانند ہے اختلافی باتوں سے گریز کریں
رسا نیوز ایجنسی - نظریہ پاکستان ٹرسٹ کونسل کے چیئرمین نے عید الفطر کے قریب ہونے کے تئیں دھشت گرادنہ کاراوئیوں سے پرھیز کی تاکید کرتے ہوئے کہا: طالبان عید کی خوشیوں کو ماتم کدہ بنانے سے گریز کریں ۔
...