20 December 2018 - 20:51
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 439416
فونت
ضیف اللہ شامی :
یمن کی قومی حکومت کے وزیر اطلاعات نے کہا ہے کہ سعودی اتحاد کی جانب سے خلاف ورزی کی صورت میں بین الاقوامی قوانین کی بنیاد پر جوابی کارروائی کرنا یمن کا مسلمہ حق ہے جو محفوظ ہے۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمن کی قومی حکومت کے وزیر اطلاعات ضیف اللہ شامی نے صنعا ایرپورٹ کھولے جانے کی روک تھام کے سلسلے میں جارح سعودی اتحاد کی کوششوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دشمن یہ ظاہر کرنے کی کوشش کر رہا ہے کہ وہ فائربندی پر کاربند ہے۔

انھوں نے کسی بھی قسم کے طے پانے والے سمجھوتے پر، خواہ وہ ظالمانہ ہی کیوں نہ ہو، یمن کی حکومت کے کاربند رہنے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یمن کی موجودہ صورت حال کے پیش نظر فائربندی پر عمل درآمد کے لئے اقوام متحدہ اور عالمی برادری کے بھرپور کردار کی ضرورت ہے۔

سعودی اتحاد کی ایک اور جارحیت کے دوران سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں اور توپ خانے کی جانب سے الحدیدہ ایرپورٹ کے اطراف اور جنوب میں سولہ کلومٹیر کے فاصلے پر واقع رہائشی علاقوں نیز الجامعہ محلے پر کئے جانے والے حملے میں ایک یمنی شہری شہید اور سات دیگر زخمی ہو گئے۔

یہ ایسی حالت میں ہے کہ شہر الحدیدہ کی فضا میں سعودی اتحاد کے ڈرون طیاروں نے بھی مختلف علاقوں میں پروازیں کیں اور عام شہریوں کو مرعوب کرنے کا سلسلہ جاری رکھا۔

سعودی اتحاد کی جانب سے فائر بندی کی خلاف ورزیوں کا یہ سلسلہ ایسی حالت میں جاری ہے کہ یمن کی عوامی تحریک انصاراللہ، یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کی جانب سے فائر بندی پر مکمل طور پر عمل کیا جا رہا ہے۔

سوئیڈن کے دارالحکومت اسٹاک ہوم میں یمن کے ہونے والے امن مذاکرات میں فائر بندی کے طے پانے والے سمجھوتے کی بنیاد پر الحدیدہ میں فائربندی پرعمل شروع کیا گیا ہے کہ جس کی سعودی اتحاد کی جانب سے خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں