06 July 2019 - 12:18
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 440732
فونت
ولایتی:
رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیرنے ایران کی جانب سے 300 کلو گرام سے زائد یورنیم کی افزودگی پر کہا کہ ایران یورنیم کی افزودگی اس سطح تک کرے گا جس حد تک اسے پرامن مقاصد کیلئے ضرورت ہو۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے کل کہا کہ امریکہ اور یورپی ممالک نے جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کی جس کی وجہ سے ایران مجبور ہوا کہ وہ اس معاہدے کے دائرے میں رہتے ہوئے اس پر اپنا رد عمل ظاہر کرے۔

ڈاکٹر ولایتی نے مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل در آمد کے سلسلے میں یورپی ممالک کو دی گئی 60 روزہ مہلت کے اختتام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر یورپی ممالک نے جوہری معاہدے سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل نہ کیا تو ایران دوسرے مرحلے میں اپنے وعدوں میں کمی لائے گا۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ اگر یورپی ممالک نے اپنے وعدوں پرعمل کیا تو ایران اپنے اقدامات سے ہاتھ کھینچ سکتا ہے۔

ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے کہا کہ ایران نے مکمل طور پر مشترکہ ایٹمی معاہدے پرعمل کیا اور بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی نے اپنی 15 رپورٹوں میں اس بات کی تائید اور تصدیق کی کہ ایران مشترکہ ایٹمی معاہدے پر گامزن ہے لیکن معاہدے پر دستخط کرنے والے ممالک نے اس پر عمل نہیں کیا جس پر ایران کو افسوس ہے اور ایران نے بھی معاہدے کے مطابق اس سے خارج ہونے کے اقدام کا آغاز کردیا ہے اور مشترکہ ایٹمی معاہدے میں شریک ممالک جتنا اس پر عمل کریں گے ایران بھی اتنا ہی عمل کرےگا۔

فلسطین کے بارے میں صدی معاملے کی شکست کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ، فلسطین اور بیت المقدس کو فروخت کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دےگی۔ /۹۸۸/ ن

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں