19 June 2018 - 15:26
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 436315
فونت
دہشتگرد قاری عمر رحمن کا تعلق خیبر پختونخوا کے ضلع سوات کے علاقہ کوز شور مٹہ سے ہے اور دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث رہا ہے۔
طالبان پاکستان

رسا نیوز ایجنسی کی موصولہ رپورٹوں کے مطابق، تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) نے اپنے نئے امیر کے نام کا اعلان کرتے ہوئے قاری عمر رحمن المعروف استاد فاتح کو ٹی ٹی پی کا نیا سرغنہ مقرر کر دیا ہے۔ نئے سرغنےکے انتخاب کا اعلان ٹی ٹی پی کی مرکزی شوریٰ نے افغانستان کے علاقے مراورہ میں قاری فضل الرحمن کے گھر میں ہونے والے اجلاس کے دوران کیا۔

ذرائع کے مطابق قاری عمر رحمن 2004ء میں اس وقت کے آرمی چیف جنرل پرویز مشرف پر حملے میں بھی ملوث تھا، سال 2007ء میں افغانستان سے واپسی پر ضلع سوات میں دہشتگردوں کے ساتھ مل کر متعدد تخریب کاری کی کارروائیوں میں حصہ لیا، تاہم بعد ازاں سال 2009ء کے دوران دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کے دوران قاری عمر رحمن اپنے دیگر ساتھیوں سمیت افغانستان فرار ہوگیا تھا۔

قاری عمر رحمن یکم دسمبر 2017ء کو پشاور کے زرعی ڈارئیکٹوریٹ پر حملے کی منصوبہ بندی میں بھی ملوث تھا۔

واضح رہے کچھ دن قبل کنڑ میں امریکی ڈرون حملے میں ٹی ٹی پی کا سرغنہ مولوی فضل اللہ اپنے ساتھیوں سمیت مارا گیا تھا۔ /۹۸۹/ ف۹۴۰

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬