08 October 2012 - 17:23
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4647
فونت
مصر کے صدر جمھوريہ:
رسا نيوزايجنسي - مصر کے صدر جمھوريہ محمد مرسي نے غزہ پٹي کے بارڈر کو بند نہ کئے جانے پر زور ديتے ہوئے کہا: فلسطينيوں کے حق ميں کوتاہي نا ممکن ہے ?
محمد مرسي

رسا نيوزايجنسي کي الاهرام آن لاين سے منقولہ رپورٹ کے مطابق، مصر کے صدر جمھوريہ محمد مرسي نے اپني صدارت کے سو دن پورے ہونے پر منعقدہ ايک پروگرام ميں اپنے ماننے والوں کے مجمع ميں جو قاھرہ اسٹيڈيم ميں منعقد ہوا کہا: اس سو دن ميں ھم نے اپني ذمہ داريوں کو بخوبي انجام نہيں ديا ?

محمد مرسي نے مزيد کہا: موجودہ بعض کاميابياں بہت مختصر ہيں، مگر پيشہ ورانہ معيار کے تحت جو کچھ بھي حاصل ہوا ہے وہ تقريبا 70 في صد کي کاميابي ہے جو اس سو دن کے اندر حاصل ہوئي ہے ?

انہوں نے کہا: دنيا کے مختلف ممالک کا ھمارا سفر مصر کي اقتصادي صورت حال کي بہتري کے لئے تھا، اور ھمارا عقيدہ ہے کہ ھميں بہت کاميابي ملے گي ?

مصر کے صدر جمھوريہ نے واضح طور پر کہا: ھم نے 11 دن ميں 9 سفر کيا جو ھمارے ملک کے اقتصاد کو 10 ارب ڈالر کي حمايت کا سبب بنا ?

انہوں نے اظھار کيا: اکتوبر ميں ازادي کا دن اس بات کي ياد دہاني ہے کہ مصر سوريہ کي عوام ايک جسم ہيں اورازادي کے ملنے تک سوريہ کي عوام کي حمايت کي جائے ?

محمد مرسي نے اپنے بيان کے ايک دوسرے حصہ ميں کہا: غزہ پٹي کا بارڈر بند نہيں کيا جائے گا، اور ھمارے پاس توانائي ہے کہ ھم خود اپنے ملک کي امنيت فراھم کرسکيں اور فلسطينيوں کے حق ميں کوتاہي ناممکن ہے ، ھم فسلطينيوں کي دوا اور غذا کي امداد کو مزيد بڑھائيں گے ، اور ھم ھميشہ فلسطنيوں کي مدد کے پابند ہيں کيوں کہ فلسطين ھم سے اور ھم فلسطينيوں ميں سے ہيں ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬