10 July 2014 - 11:05
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7000
فونت
رمضان المبارک میں غزہ کے مسلمانوں پر قہر ؛
رسا نیوز ایجنسی ـ صیہونی ریاست اسرائیل نے فلسطینی شہریوں پر ظلم کی انتہا کر دی۔ وحشیانہ بمباری کرکے اٹھائیس نہتے فلسطینیوں کو موت کی نیند سلا دیا۔

 
رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صیہونی ریاست اسرائیل نے فلسطینی شہریوں پر ظلم کی انتہا کر دی۔ وحشیانہ بمباری کرکے اٹھائیس نہتے فلسطینیوں کو موت کی نیند سلا دیا۔ بمباری میں درجنوں گھر تباہ جبکہ سینکڑوں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ رات بھر غزہ میں مزید ایک سو ساٹھ اہداف کو نشانہ بنایا گیا۔
اسرائیلی فضائیہ نے غزہ شہر میں شدید بمباری کرکے بچوں، خواتین سمیت درجنوں فلسطینی شہریوں کو شہید کر دیا، زخمیوں کی تعداد سینکڑوں سے زیادہ بتائی جا رہی ہے۔ صیہونی ریاست اسرائیل نے بییٹ ہانون میں ایک گھر کو نشانہ بنایا جس میں دو بھائی والدین سمیت شہید ہوگئے۔
جب کہ رفاہ میں ایک نوجوان کو شہید کر دیا، فضائی کارروائی میں پچاس گھر ملبے کا ڈھیر بن گئے، سترہ سو گھروں کو بری طرح نقصان پہنچا۔
فلسطین کے صدر محمود عباس نے اپنے شہریوں کی حفاظت کے لیے سلامتی کونسل سے مدد طلب کی ہے۔ اسرائیل نے اپنی ریزرو فورس کے مزید چالیس ہزار اہلکار طلب کرتے ہوئے غزہ کی سرحد کے ساتھ مزید فوج اور ٹینک تعینات کر دیئے ہیں۔
اسرائیلی وزیر دفاع نے ڈھٹائی کے ساتھ معصوم بچوں اور خواتین کی شہادت کو "آپریشن پروٹیکٹو ایج" کا نام دیتے ہوئے کہا ہے کہ کارروائی اسرائیلی شہریوں کی حفاظت کیلئے کی جا رہی ہے۔
ادھر سمندر کے راستے سے صیہونی ریاست اسرائیل میں داخل ہونے والے 4 فلسطینی مزاحمت کار صیہونی فوج کے ساتھ جھڑپ میں جاں بحق ہوگئے۔ صیہونی حملوں کا جواب دینے کے لیے حماس نے نئی حکمت عملی اختیار کی ہے اور غزہ سے اسرائیل کے جنوبی ساحلی علاقے میں مزاحمت کار بھیجے گئے، جن کی صیہونی فورسز سے شدید جھڑپیں ہوئیں، جن میں اسرائیل کی نیوی، فضائیہ اور زمینی فوجوں نے حصہ لیا۔ جھڑپوں میں صیہونی فوج نے چار مزاحمت کاروں کو مارنے کا دعویٰ کیا ہے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬