‫‫کیٹیگری‬ :
22 October 2017 - 18:16
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 430482
فونت
قائد ملت جعفریہ پاکستان :
حجت الاسلام سید ساجد علی نقوی نے کہا : افغان حکومت کو چاہیے کہ خود کش حملوں میں ملوث اس گروہ کے خلاف وہ اپنے قوانین کے مطابق کارروائی کرتے ہوئے حملہ آوروں اور کے سرپرستوں کو قانون کے شکنجہ میں لیکر قرار واقع سزا دئے ۔
قائد ملت جعفریہ پاکستان

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق قائد ملت جعفریہ پاکستان حجت الاسلام سیدساجد علی نقوی نے گزشتہ روز افغانستان کی دو مساجد پر خودکش حملوںمیں کم از کم 60 نمازیوںکی شہادت کی شدید الفاظ میں مذمت اور نمازیوں کی قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے افغانی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کےلئے موثر اقدامات کریں تاکہ شہریوں کا تحفظ ممکن ہو ۔

حجت الاسلام ساجد نقوی کا کہنا تھا کہ اس سے قبل بھی بیس اگست کو کابل میں نمازیوں پر ہونے والے ایک حملے میں 20 نمازی شہید ہو گئے تھے۔اُس وقت بھی حملے کی ذمہ داری ایک گروہ نے قبو ل کی تھی اور اس واقع کی ذمہ داری بھی اسی گروہ نے قبول کی ہے افغان حکومت کو چاہیے کہ خود کش حملوں میں ملوث اس گروہ کے خلاف وہ اپنے قوانین کے مطابق کارروائی کرتے ہوئے حملہ آوروں اور کے سرپرستوں کو قانون کے شکنجہ میں لیکر قرار واقع سزا دئے ۔

حجت الاسلام ساجد نقوی کا مزید کہنا تھا کہ مساجد پر خودکش حملے ایک بزدلانہ کارروائی ہے اسلام خود کش حملو ں کی اجازت نہیں دیتا اور یہ حملے انسانیت کے خلاف ہیں۔ پاکستانی عوام دکھ کی اس گھڑی میں افغانی بھائیوں کے ساتھ ہیں ۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬