01 March 2020 - 19:29
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 442209
فونت
حجت الاسلام سید سبطین حیدر سبزواری :
شیعہ علماء کونسل شمالی پنجاب کے صدر نے کہا کہ مسلمان ممالک کی تنظیم او آئی سی مردہ گھوڑا بن چکی ہے، اس سے مسلمانوں کو کوئی فائدہ نہیں ہوا، اسے ختم کرکے متحرک ممالک پر مشتمل مسلمانوں کی نمائندگی کا نیا پلیٹ فارم تشکیل دیا جائے۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، شیعہ علماء کونسل شمالی پنجاب کے صدر حجت الاسلام سید سبطین حیدر سبزواری نے مطالبہ کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں ھندوستان میں مسلم کش فسادات کا نوٹس لیں اور غیر انسانی اقدامات کو رکوانے میں کردار ادا کریں، ھندوستانی مسلمانوں پر ہونیوالے مظالم کیخلاف ملت اسلامیہ کی بے حسی قابل مذمت ہے۔

انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ اپنی ذمہ داری سے غافل ہو چکی ہے، دنیا میں کوئی اسلامی ملک نہیں جس نے ھندوستانی مسلمانوں کے کشمیریوں پر ہونیوالے مظالم کی داد رسی کی ہو۔ 

علامہ سبطین سبزواری نے کہا کہ دہلی میں مسلمان آبادیوں کو آر ایس ایس کے غنڈوں اور جانبدارانہ پولیس کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے، امام مسجد کی آنکھیں نکالی گئیں، ان پر تیزاب پھینکا گیا، ان ظالمانہ اقدامات کی بھرپور مذمت کرتے اور کہتے ہیں کہ ھندوستانی مظالم پر مسلم ممالک کی خاموشی اور بے حسی، ظلم میں شریک ہونے کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسلمان ممالک کی تنظیم او آئی سی مردہ گھوڑا بن چکی ہے، اس سے مسلمانوں کو کوئی فائدہ نہیں ہوا، اسے ختم کرکے متحرک ممالک پر مشتمل مسلمانوں کی نمائندگی کا نیا پلیٹ فارم تشکیل دیا جائے، جسے واقعی مسلمانوں پر ہونیوالے مظالم کی تکلیف محسوس ہو اور وہ دنیا بھر میں ان کا مقدمہ لڑنے کیلئے تیار ہو، او آئی سی سے مسلمانوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا، بلکہ اس کے بعض اقدامات سے اسلام دشمن ممالک اسرائیل اور بھارت کو فائدہ ہوا ہے۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پرطرفدارترین