‫‫کیٹیگری‬ :
18 November 2018 - 19:39
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 437680
فونت
نائیجیریا کے عوام نے ایک بار پھر اس ملک کے دارالحکومت ابوجا میں اسلامی تحریک کے رہنما آیت اللہ شیخ زکزکی کی حمایت میں مظاہرے کئے اور ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا۔
آیت اللہ شیخ ابراہیم زکزکی

رسا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کی رپورٹ نائیجیریا کے عوام نے ان مظاہروں میں  آیت اللہ شیخ زکزکی اور ان کی اہلیہ کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے  ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ نائیجیریا کی فوج نے بارہ اور تیرہ دسمبر دو ہزار پندرہ کو چہلم امام حسین علیہ السلام کے موقع پر زاریا شہر میں ایک امام بارگاہ اور آیۃ اللہ شیخ زکزکی کے گھر پر حملہ کر کے ہزاروں شیعہ مسلمانوں کو شہید  اور زخمی کر دیا تھا۔

نائیجیریا کی عدالت نے دسمبر دو ہزار سولہ میں آیت اللہ شیخ زکزکی کو رہا کئے جانے اور ان کے گھرانے کو ڈیڑھ لاکھ ڈالر کا تاوان ادا کئے جانے کا حکم سنایا مگر اس ملک کی فوج نے اس حکم کو نہیں مانا۔

نائیجیریا کی فوج آیۃ اللہ ابراہیم زکزکی اور ان کی اہلیہ کو زخمی کرنے کے بعد گرفتار کر کے لے گئی تھی۔ جس کے بعد سے جیل میں آیۃ اللہ زکزکی کی جسمانی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔ فوج کی فائرنگ سے آیت اللہ زکزاکی کے تین بیٹے بھی شہید ہوئے تھے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬