02 March 2019 - 11:50
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 439875
فونت
ﺍﻧﺠﻤﻦ ﺷﺮﻋﯽ ﺷﯿﻌﯿﺎﻥ ﺟﻤﻮﮞ ﻭ ﮐﺸﻤﯿﺮکے ﺻﺪﺭ نے ﺑﻤﻨﮧ کشمیر ﻣﯿﮟ ﻋﻮﺍﻣﯽ ﺍﺟﺘﻤﺎﻉ ﺳﮯ ﺧﻄﺎﺏ کرتے ہوئے کہا : : ﮨﻨﺪﻭﺳﺘﺎﻥ ﺍﻭﺭ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﺟﻮﮨﺮﯼ ﮨﺘﮭﯿﺎﺭﻭﮞ ﺳﮯ ﻣﺴﻠﺢ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺟﻮﮨﺮﯼ ﺗﺼﺎﺩﻡ ﮐﮯ ﻧﺘﯿﺠﮯ ﻣﯿﮟ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﻣﻠﮏ ﺗﺒﺎﮦ ﮨﻮں گے ۔

رسا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کی رپورٹ کے مطابق، ﺍﻧﺠﻤﻦ ﺷﺮﻋﯽ ﺷﯿﻌﯿﺎﻥ ﺟﻤﻮﮞ ﻭ ﮐﺸﻤﯿﺮکے  ﺻﺪﺭ اور ﺁﯾﺖ ﺍﻟﻠﮧ ﯾﻮﺳﻒ ﻣﯿﻤﻮﺭﯾﻞ ﭨﺮﺳﭧ کے ﭼﯿﺮﻣﯿﻦ ﺣﺠﺖ ﺍﻻﺳﻼﻡ ﻭﺍﻟﻤﺴﻠﻤﯿﻦ ﺁﻏﺎ ﺳﯿﺪ ﻣﺤﻤﺪ ﮨﺎﺩﯼ ﺍﻟﻤﻮﺳﻮﯼ ﺍﻟﺼﻔﻮﯼ ﻧﮯ نے  ﺟﻤﻌﮧ ﮐﮯ ﺭﻭﺯ ﻣﺮﮐﺰﯼ ﺍﻣﺎﻡ ﺑﺎﺭﮔﺎﮦ ﺁﯾﺖ ﺍﻟﻠﮧ ﯾﻮﺳﻒ رہ ( ﺷﺎﺭﻉ ﻓﻀﻞ ﺍﻟﻠﮧؒ ‏) ﺑﻤﻨﮧ ﻣﯿﮟ ﻋﻮﺍﻣﯽ ﺍﺟﺘﻤﺎﻉ ﺳﮯ ﺧﻄﺎﺏ میں ﮨﻨﺪﻭﺳﺘﺎﻥ ﺍﻭﺭ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﮐﮯ ﺩﺭﻣﯿﺎﻥ ﮐﺸﯿﺪﮔﯽ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﻣﻠﮑﻮﮞ ﮐﯽ ﺟﺎﻧﺐ ﺳﮯ ﺣﺎﻟﯿﮧ ﻓﻀﺎﺋﯽ ﺣﻤﻠﻮﮞ ﭘﺮ ﺍﻓﺴﻮﺱ ﮐﺎ ﺍﻇﮩﺎﺭ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﺟﻨﮕﯽ ﺻﻮﺭﺗﺤﺎﻝ ﺳﮯ ﻣﺴﺎﺋﻞ ﺍﻭﺭ ﺑﮕﮍﯾﮟ ﮔﮯ ﺣﻞ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮں گے ۔

ﺣﺠﺖ ﺍﻻﺳﻼﻡ ﻭﺍﻟﻤﺴﻠﻤﯿﻦ ﺍﻟﻤﻮﺳﻮﯼ ﺍﻟﺼﻔﻮﯼ ﻧﮯ یہ کہتے ہوئے کہ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﻣﻠﮑﻮﮞ ﮐﻮ ﭼﺎﮨﯿﮯ ﮐﮧ ﺑﺎﮨﻤﯽ ﮐﺸﯿﺪﮔﯽ ﮐﻮ ﺧﺘﻢ ﮐﺮﮐﮯ ﻣﺬﺍﮐﺮﺍﺕ ﺳﮯ ﻣﺴﺎﺋﻞ ﮐﺎ ﭘُﺮﺍﻣﻦ ﺣﻞ ﺗﻼﺵ ﮐﺮﯾﮟ ﮐﮩﺎ : ﮨﻨﺪﻭﺳﺘﺎﻥ ﺍﻭﺭ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﺟﻮﮨﺮﯼ ﮨﺘﮭﯿﺎﺭﻭﮞ ﺳﮯ ﻣﺴﻠﺢ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺟﻮﮨﺮﯼ ﺗﺼﺎﺩﻡ ﮐﮯ ﻧﺘﯿﺠﮯ ﻣﯿﮟ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﻣﻠﮏ ﺗﺒﺎﮦ ﮨﻮں گے ۔

انہوں اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ ﺿﺮﻭﺭﺕ ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﯽ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺑﺎﮨﻤﯽ ﻣﻌﺎﻣﻼﺕ ﮐﻮ ﻧﺰﺍﮐﺖ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺭ ﺍﻧﺪﯾﺸﯽ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺣﻞ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯکہا: ﺁﺝ ﺩﻧﯿﺎ ﭘﺮ ﺍﯾﮏ ﺑﺎﺭ ﭘﮭﺮ ﯾﮧ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﻋﯿﺎﮞ ﮨﻮگئی ﮐﮧ ﮐﺸﻤﯿﺮ کا ﻣﺴﺌﻠﮧ ﺍﯾﮏ ﺍﻧﺘﮩﺎﺋﯽ ﺣﺴﺎﺱ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮨﮯ ﺟﺲ ﮐﺎ ﺍﮔﺮ ﻓﻮﺭﯼ ﻃﻮﺭ ﺍﻭﺭ ﻋﻮﺍﻣﯽ ﺧﻮﺍﮨﺸﺎﺕ ﮐﮯ ﻣﻄﺎﺑﻖ ﺣﻞ ﻧﮧ ﻧﮑﺎﻻ ﮔﯿﺎ ﺗﻮ ﺧﻄﺮﻧﺎﮎ ﺻﻮﺭﺗﺤﺎﻝ ﺍﺧﺘﯿﺎﺭ ﮐﺮﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﻧﺘﯿﺠﮧ ﻣﯿﮟ ﻧﮧ ﻓﻘﻂ ﯾﮧ ﺧﻄﮧ ﺑﻠﮑﮧ ﭘﻮﺭﯼ ﺩﻧﯿﺎ کوخطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔

ﺍﻧﺠﻤﻦ ﺷﺮﻋﯽ ﺷﯿﻌﯿﺎﻥ ﺟﻤﻮﮞ ﻭ ﮐﺸﻤﯿﺮکے  ﺻﺪﺭ ﻧﮯ ﮨﻨﺪﻭﺳﺘﺎﻧﯽ ﻣﯿﮉﯾﺎ کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا: ﻭﮦ ﻣﻮﺟﻮﺩﮦ ﺻﻮﺭﺗﺤﺎﻝ ﻣﯿﮟ ﺟﻠﺘﯽ ﺁﮒ ﭘﺮ ﺗﯿﻞ ﮈﺍﻟﻨﮯ ﮐﺎ ﮐﺎﻡ ﮐﺮﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ، جبکہ ﺟﻨﮕﯽ ﺻﻮﺭﺗﺤﺎﻝ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﻋﻮﺍﻡ ﺧﻮﻑ ﻭ ﮨﺮﺍﺱ ﮐﺎ ﺷﮑﺎﺭ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺟﻨﮕﯽ ﺟﮩﺎﺯﻭﮞ ﮐﯽ ﻣﺴﻠﺴﻞ ﻓﻀﺎﺋﯽ ﮔﺸﺘﻮﮞ ﺳﮯ ﮐﺸﻤﯿﺮﯼ ﻋﻮﺍﻡ ﮐﺎ ﺳﮑﻮﻥ ﭼﮭﻦ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ۔

انہوں نے ﻣﺮﮐﺰﯼ ﺣﮑﻮﻣﺖ ﮐﯽ ﺟﺎﻧﺐ ﺳﮯ ﺟﻤﺎﻋﺖ ﺍﺳﻼﻣﯽ ﺟﻤﻮﮞ ﻭﮐﺸﻤﯿﺮ ﭘﺮ ﭘﺎﻧﭻ ﺳﺎﻝ ﺗﮏ ﭘﺎﺑﻨﺪﯼ ﻋﺎﺋﺪ ﮐﺌﮯ ﺟﺎﻧﮯ ﮐﯽ ﺷﺪﯾﺪ ﻣﺬﻣﺖ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﮐﮩﺎ : ﺟﻤﺎﻋﺖ ﺍﺳﻼﻣﯽ ﺍﯾﮏ ﻣﻌﺮﻭﻑ ﻭ ﺳﺮﮔﺮﻡ ﺟﻤﺎﻋﺖ ﮨﮯ ﺟﺲ ﮐﺎ ﺳﻤﺎﺟﯽ ﻭ ﺗﻌﻠﯿﻤﯽ ﺷﻌﺒﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﮐﺎﻓﯽ ﺍﮨﻢ ﺭﻭﻝ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﭘﺮ ﭘﺎﺑﻨﺪﯼ ﻟﮕﺎﻧﺎ ﺍﯾﮏ ﺍﻓﺴﻮﺳﻨﺎﮎ ﻗﺪﻡ ﮨﮯ۔

ﺁﯾﺖ ﺍﻟﻠﮧ ﯾﻮﺳﻒ ﻣﯿﻤﻮﺭﯾﻞ ﭨﺮﺳﭧ کے ﭼﯿﺮﻣﯿﻦ ﻧﮯ اس بات کی تاکید کرتے ہوئے کہ ﺁﺭ ﺍﯾﺲ ﺍﯾﺲ ﺍﻭﺭ ﻭﯼ ﺍﯾﭻ ﭘﯽ ﺟﯿﺴﯽ ﮨﻨﺪﻭ ﺍﻧﺘﮩﺎ ﭘﺴﻨﺪ ﺟﻤﺎﻋﺘﯿﮟ ﺑﯽ ﺟﯽ ﭘﯽ ﮐﯽ ﭘﺸﺖ ﭘﻨﺎﮨﯽ ﺳﮯ ﻗﺼﺪﺍً ﻣﺴﻠﻤﺎﻧﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﺍﺳﻼﻣﯽ ﻣﺬﮨﺒﯽ ﻋﻼﻣﺘﻮﮞ ﮐﻮ ﻇﻠﻢ ﻭ ﺗﺸﺪﺩ ﮐﺎ ﻧﺸﺎﻧﮧ ﺑﻨﺎ ﺭﮨﯽ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺑﮭﺎﺭﺕ ﮐﯽ ﻣﺬﮨﺒﯽ ﺭﻭﺍﺩﺍﺭﯼ ﮐﻮ ﭘﺎﺭﮦ ﭘﺎﺭﮦ ﮐﺮﺭﮨﯽ ﮨﮯ جس پرحکومت کی معنی دار خاموشی دنیا کے حریت مزاجوں اور حریت پسندوں کے لئے لمحہ فکریہ ہے، کہا: ﺟﻤﺎﻋﺖ ﺍﺳﻼﻣﯽ ﭘﺮ ﭘﺎﺑﻨﺪﯼ ﻟﮕﺎﻧﮯ ﺳﮯ ﮐﺸﻤﯿﺮﯼ ﻋﻮﺍﻡ ﮐﮯ ﺟﺬﺑﺎﺕ ﻣﺠﺮﻭﺡ ﮨﻮﺋﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺣﺎﻻﺕ ﻣﺰﯾﺪ ﺑﮕﮭﮍﻧﮯ ﮐﺎ ﺍﻧﺪﯾﺸﮧ ﮨﮯ، لہذا ﺣﮑﻮﻣﺖ ﮨﻨﺪ ﺳﮯ ﺍﺱ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﭘﺮ ﻧﻈﺮ ﺛﺎﻧﯽ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﯽ ﺍﭘﯿﻞ ہے ۔/۹۸۸/ ن

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پرطرفدارترین