‫‫کیٹیگری‬ :
22 June 2013 - 13:55
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 5563
فونت
حجت الاسلام امین شہیدی:
رسا نیوز ایجنسی - ایم ڈبلیو ایم پاکستان کے ڈپٹی جنرل سکریٹری حجت الاسلام امین شہیدی نے حالیہ پیشاور سانحہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے سعودی امداد اور نواز شریف حکومت کا تحفہ جانا ۔
محمد امين شھيدي


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے ڈپٹی جنرل سکریٹری حجت الاسلام محمد امین شہیدی نے لیڈی ریڈنگ پشاور میں سانحہ جامعۃ الشھید عارف حسین الحسینی میں زخمی ہونے والے نمازیوں کی عیادت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا: سانحہ پشاور سعودی امداد اور نواز شریف حکومت کا تحفہ ہے ۔


حجت الاسلام شہیدی ںے تاکید کی:  آج بے گناہوں کو نشانہ بنانے والے پاکستان سکیورٹی اداروں میں موجود کالی بھیڑوں کے تربیت یافتہ افراد ہیں ۔


شہیدی نے حالیہ پیشاور سانحہ کو سعودی امداد اور نواز شریف حکومت کا تحفہ بتاتے ہوئے کہا: سانحہ پشاور ہمارے نئے حکمرانوں کے منہ پر طمانچہ ہے، طالبان کیساتھ مذاکرات کی باتیں کرنے والوں کی آنکھیں اب کھل جانی چاہیں، پوری قوم کو دہشتگردوں کے خلاف یک جان ہونا ہوگا۔


انہوں نے مزید کہا : آج جن درندوں نے ملک میں دہشتگردی کا بازار گرم کر رکھا ہے اب وہ پورے ملک کیلئے ناسور بن چکے ہیں۔ 


شہیدی نے تاکید کی: پشاور سے کراچی تک ملک کا کوئی حصہ امن نہیں، جس طرح پیپلز پارٹی نے دہشتگردوں کو سپورٹ کیا تو انہی دہشتگردوں نے پیپلز پارٹی کو نشانہ بنایا، اگر یہی غلطی نون لیگ اور تحریک انصاف نے کی تو انہیں بھی اسی قسم کے حالات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔


قابل ذکر ہے کہ حجت الاسلام امین شہیدی نے لیڈی ریڈنگ اسپتال میں زیر علاج زخمی نمازیوں کی عیادت اور جامعہ شہید عارف حسین الحسینی کے دورہ کے بعد شہید قائد حجت الاسلام سید عارف حسین الحسینی کے صاحبزادے سید علی الحسینی سے ان کے بیٹے سید مہدی الحسینی کی شہادت پر تعزیت کی اور دیگر شہداء کے لواحقین کو بھی تعزیت دی۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬