11 October 2016 - 14:55
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 423778
فونت
علی شمخانی:
ایران کے قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے دہشت گردی کے خلاف ایران روس اسٹریٹیجک تعاون جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔
علی شمخانی

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ایران کی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے تہران میں شام کے امور میں روسی صدر کے خصوصی ایلچی الیگزینڈر لاؤرنتیوف سے بات چیت کرتے ہوئے دہشت گردی کے خلاف مہم میں ایران روس اسٹریٹیجک تعاون کو ضروری قرار دیا۔

ڈاکٹرعلی شمخانی نے بیان کیا : دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مغرب کا اپنے دوہرے معیاروں پر پردہ ڈالنے کا سیاسی اور تشہیراتی ڈرامہ فلاپ ہو گیا ہے۔

انہوں نے کہا : عالمی رائے کو پتہ چل گیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے مغربی دعووں میں کوئی صداقت موجود نہیں ہے۔

ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے کہا : سیاسی مقاصد کو آگے بڑھانے کے لیے دہشت گردی کو بطور ہتھکنڈہ استعمال کرنے کی پالیسی ہی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکہ اور مغربی ملکوں کی سب سے بڑی مشکل ہے۔

ڈاکٹر علی شمخانی نے کہا : مغرب کے دوہرے معیاروں کی وجہ سے نہ صرف مغربی ملکوں کی سلامتی کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ رہا ہے بلکہ امریکہ اور مغربی ملکوں میں دہشت گردی زور پکڑتی جا رہی ہے۔

انہوں نے واضح کیا : شام کی قانونی حکومت کی خواہش اور اجازت کے بغیر، ہر طرح کی بیرونی فوجی مداخلت، شام کے اقتدار اعلی کی خلاف ورزی اور بحران کے مزید پیچیدہ ہونے کا سبب بن رہی ہے۔

ایران کی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے دہشت گردوں اور ان کے حامیوں کے خلاف جنگ میں ایران، روس اور شام کے درمیان تعاون کو مزید مضبوط بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

شام کے امور میں روسی صدر کے خصوصی ایلچی الیگزینڈر لاورنتیوف نے اس موقع پر کہا : شام میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں روس اور ایران کے درمیان تعاون پائیدار، اسٹریٹیجک اور ہمہ گیر ہے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬