10 May 2016 - 16:44
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 422260
فونت
ایرانی صدر جمھوریہ:
اسلامی جمھوریہ ایران کے صدر مملکت نے پابندیوں کے ہٹنے کے بعد بھی امریکا کی جانب سے ایران سرمایہ واپس نہ کئے جانے پر کہا: امریکہ کی جانب سے ایرانی قوم کے دو ارب ڈالر ضبط کئے جانے کا کیس جلد ہی بین الاقوامی عدالت انصاف میں پیش کر دیا جائے گا۔
ڈاکٹر حسن روحانی

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حجت الاسلام والمسلمین ڈاکٹر حسن روحانی نے آج منگل کو جنوبی ایران کے صوبے کرمان میں عظیم عوامی اجتماع سے اپنے خطاب میں تاکید کے ساتھ کہا : حکومت، امریکہ کی جانب سے ایرانی قوم کے ضبط کئے جانے والے دو ارب ڈالر کو واپس لینے کے لئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرے گی۔


ڈاکٹر روحانی نے ایٹمی معاہدے پرعمل درآمد کے نتائج کا ذکر کرتے ہوئے کہا: گذشتہ چند ماہ کے دوران ایران میں تین ارب سے زائد ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی ہے۔


انہوں نے مزید کہا: ایران کی حکومت اس بات کی ہرگز اجازت نہیں دے گی کہ ایرانی عوام کی دولت کو ضبط کر لیا جائے اور اس معاملے کو جلد ہی بین الاقوامی عدالت انصاف میں پہنچا دیا جائے گا۔


ایرانی صدر مملکت نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ رہبر انقلاب اسلامی کی ہدایات، عوام اور دیگر قوتوں کے اتحاد کی بدولت اسلامی جمہوریہ ایران تاریخی مراحل کو بخوبی طے کرنے اور ایٹمی معاہدے میں فتح حاصل کرنے میں کامیاب رہا ہے کہا: سامراجیت کی جانب سے پیش کردہ ایران فوبیا کا حربہ اب ناکام ہو چکا ہے اور اقوام عالم پر ایران کے دشمنوں کی باتوں کا کوئی اثر نہیں ہوتا۔


انہوں نے ایران اور علاقے کی سلامتی کے تحفظ میں سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے موثر کردار کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا : سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی، عراق و شام میں حرم ھای مطہر اور زیارتگاہوں کے دفاع اور لبنان، فلسطین، افغانستان اوران تمام علاقوں میں کہ جہاں ایران کی حکومت اور قوم سے مدد کی درخواست کی گئی ہے، مکمل حوصلے اور دلیری سے کام لے رہی ہے۔


واضح رہے کہ ڈاکٹر حسن روحانی اپنے ستّائیسویں صوبائی دورے میں آج منگل کو جنوبی ایران کے صوبے کرمان پہنـچے ہیں وہ اپنے اس دو روزہ صوبائی دورے میں مختلف پروجیکٹوں اور منصوبوں کا افتتاح اور سرمایہ کاری اور ترقی سے متعلق اجلاس میں شرکت کے علاوہ اس صوبے کے مختلف علماء اور فداکار و برگزیدہ شخصیات سے ملاقات بھی کریں گے۔

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬