24 December 2016 - 15:10
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425267
فونت
پولیس انسپکٹر جنرل ناصر خان درانی:
آئی جی خیبر پختونخوا کا کہنا ہے کہ کے پی کے میں داعش کا مستقل وجود نہیں، کالعدم تنظیمیں داعش کا نام استعمال کرکے کارروائیاں کر رہی ہیں۔
ناصر خان درانی


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،انسپکٹر جنرل پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان درانی نے کہا :‌ سی ٹی ڈی نے دو سال کے دوران 1200 دہشتگردوں کو گرفتار کیا، جبکہ انہوں نے کہا کہ صوبے میں داعش کا کوئی وجود نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق سی ٹی ڈی نےخیبر پختونخوا میں 1200 دہشتگردوں کو گرفتار کیا، جبکہ 120 ملزمان کے سروں کی قمیت مقرر کی۔

آئی جی خیبر پختونخوا ناصر خان درانی کا کہنا ہے کہ کے پی کے میں داعش کا مستقل وجود نہیں، کالعدم تنظیمیں داعش کا نام استعمال کرکے کارروائیاں کر رہی ہیں۔ ناصر خان درانی کے مطابق سال 2016ء میں دہشتگردی میں کمی آئی، جبکہ 2014ء میں دہشت گردی کے 485 جبکہ 2015ء میں 207 اور سال 2016ء میں 190 واقعات ہوئے۔ واضح رہے کہ آئی جی خیبر پختونخوا کا یہ بھی کہنا ہے رواں سال 196 مقامات سے بارودی مواد برآمد کرکے ناکارہ بنا دیا گیا۔/۹۸۸/ ن۹۴۰

 
 


 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬