02 September 2016 - 20:38
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 422994
فونت
پاکستان لیفٹیننٹ جنرل:
لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ نے اعلان کیا : داعش سمیت کسی دہشت گرد کو پاکستان میں نہیں چھوڑیں گے۔
داعش

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ کا راولپنڈی میں میڈیا بریفنگ کے دوران بیان کیا : داعش کے لئے کام کرنے والے تمام افراد پکڑے جا چکے ہیں، داعش کا سایہ بھی پاکستان پر نہیں پڑنے دیں گے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے پاکستان میں داعش کے کردار کی وضاحت کرتے ہوئے کہا : داعش نے دو حصوں میں پاکستان میں گھسنے کی کوشش کی، ٹی ٹی پی کے چھے افراد نے داعش میں شمولیت اختیار کی، جبکہ اسی دوران پاکستان کے مختلف علاقوں میں وال چاکنگ کی گئی، لیکن قوم نے داعش کو مسترد کر دیا، اس لئے اسے چھپنے کی جگہ نہ ملی۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے بتایا : داعش نے میڈیا ہاؤسز پر بھی حملے کئے، تمام حملہ آور پکڑے جا چکے ہیں۔ دنیا نیوز، فیصل آباد آفس پر حملے میں داعش پاکستان کا کمانڈر حافظ عمر ملوث تھا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق پاکستان میں داعش کیلئے کام کرنے والے تمام افراد پکڑے جا چکے ہیں، افغانستان میں داعش سرحد کے قریب چوکیاں بنا رہے ہیں، لیکن پاکستان پر داعش کا سایہ بھی نہیں پڑنے دیں گے۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ نے اعلان کیا : داعش سمیت کسی دہشت گرد کو پاکستان میں نہیں چھوڑیں گے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر عاصم باجوہ نے بیان کیا : آپریشن ضرب عضب میں ۵۳۷  فوجی جوان شہید اور دو ہزار سے زیادہ زخمی ہوئے۔ پاک فوج نے اس آپریشن میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے ۳۵ سو دہشت گردوں کو جہنم واصل کیا۔

عاصم باجوہ نے بیان کیا : آپریشن کے دوران بھاری اسلحہ، بارودی مواد اور لٹریچر قبضے میں لیا گیا۔ دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان میں ۲۱ سال جنگ کا اسلحہ و بارود جمع کر رکھا تھا۔

عاصم باجوہ نے کہا : ضرب عضب میں آئی ای ڈیز بنانے والی ۷۵۹۹ فیکٹریاں تباہ کی گئیں، ۱۶۸ کومبنگ آپریشن ہوئے۔ آپریشن کے دوران ۳۵۳۱۰، راکٹس اور مارٹر بم جبکہ ۲۸۴۱ سرنگیں برآمد کیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنی میڈیا بریفنگ میں کراچی آپریشن پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا : آپریشن سے دہشتگردی کے واقعات میں ۷۴ جبکہ ٹارگٹ کلنگ گلنگ کے واقعات میں ۹۴ فیصد کمی آئی۔ بھتہ خوری میں ۹۵ فیصد اور اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ۸۹ فیصد کمی آئی۔

عاصم سلیم باجوہ نے بتایا کراچی میں قیام امن کے لئے رینجرز کے ۳۰ جوانوں نے قربانی دی اور بے شمار جوان معذور ہوئے۔ ڈی جی آئی ایس پی نے کہا : ایم کیو ایم قائد دوسرے ملک میں بیٹھا ہے اور وہ وہاں کا شہری ہے۔ تشدد کے لئے اکسانے پر کافی کارروائیاں ہوچکی ہیں۔ اب معاشرے میں کافی آگاہی پیدا ہوچکی ہے، ہر شہری نے پاکستان مخالف نعروں کی مذمت کی۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں