19 December 2016 - 18:37
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425171
فونت
حجت السلام و المسلمین راجہ ناصر عباس جعفری:
تنظیمی اجلاس سے خطاب میں ایم ڈبلیو ایم کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ دہشتگردی کے خاتمے میں حکومت کی سنجیدگی اخباری بیانات کی حد تک دکھائی دے رہی ہے۔ حکمرانوں کے طرز عمل سے یہ واضح طور پر نظر آرہا ہے کہ انہیں ملک و قوم کے مفاد سے کوئی غرض نہیں۔
حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل حجت السلام و المسلمین راجہ ناصر عباس جعفری نے تنظیمی اجلاس سے خطاب میں کہا:‌ دہشتگردی کے خاتمے میں حکومت کی سنجیدگی اخباری بیانات کی حد تک دکھائی دے رہی ہے۔ حکمرانوں کے طرز عمل سے یہ واضح طور پر نظر آرہا ہے کہ انہیں ملک و قوم کے مفاد سے کوئی غرض نہیں۔

انہوں نے کہا:‌ پاکستان مسائل کے چنگل میں پھنسا ہوا ہے، جس کی بنیادی وجہ نااہل حکمران ہیں۔ صحت، تعلیم اور روزگار کی فراہمی سمیت بنیادی اہداف پر کوئی ایسی حکمت عملی مرتب نہیں کی گئی، جسے بہترین نتائج کی حامل قرار دیا جا سکے۔ پڑوسی ممالک سے بگڑتے ہوئے تعلقات ناکام خارجہ پالیسی کے عکاس ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں انصاف ناپید ہوچکا ہے۔ طبقاتی تفریق لوگوں میں مایوسی پیدا کر رہی ہے، جس سے جرائم میں اضافہ ہوا ہے۔ میرٹ کی بجائے اقربا پروری، سفارش، رشوت اور اختیارات کی بالادستی ہر شعبہ میں نمایاں نظر آتی ہے۔ ریاست اور عوام کے تعلق میں دانستہ طور پر دوری پیدا کی جا رہی ہے، تاکہ حب الوطنی کے جذبات کو دلوں سے نکالا جا سکے۔ پڑھے لکھے باصلاحیت نوجوان روزگار کے لئے دربدر جبکہ اعلٰی عہدوں کو من پسند افراد میں بانٹا جا رہا ہے۔ قومی اداروں کو حکمران ذاتی مقاصد کے لئے استعمال کر رہے ہیں۔ دہشت گردی کے خاتمے میں حکومت کی سنجیدگی اخباری بیانات کی حد تک دکھائی دے رہی ہے۔ حکمرانوں کے طرز عمل سے یہ واضح طور پر نظر آ رہا ہے کہ انہیں ملک و قوم کے مفاد سے کوئی غرض نہیں۔ ملک میں بڑھتے ہوئے جرائم کی ایک وجہ بے روزگاری بھی ہے۔ مختلف ممالک میں پڑھے لکھے لوگوں کو باعزت روزگار فراہم کرنے کے لئے صنعتیں لگائی جاتیں ہیں، لیکن یہاں صعنت سازی حکومتی عدم توجہی کا شکار ہے۔ ملک کے چھوٹے بڑے مختلف شہروں اور دیہی علاقوں میں علاج معالجے کی سہولیات برائے نام ہیں۔ /۹۸۸/ ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬