12 January 2017 - 20:46
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425655
فونت
پشاور میں تحفظ علماء و مدارس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ کا کہنا تھا کہ یہ حقانیہ کی برکات اور کاوشیں تھیں کہ سویت یونین کو ٹکڑے ٹکرے کر دیا۔
طالبان


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے کہا ہے کہ طالبان ہمارے بچے ہیں۔ افغانستان میں جہاد کرنے والے طالبان پر ہمیں فخر ہے۔

پشاور پردہ باغ میں تحفظ علماء و مدارس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا سمیع الحق نے کہا ہے کہ پاکستان اس وقت بہت ہی نازک دور سے گزر رہا ہے۔ جمعیت کا مقصد اقتدار میں آنا نہیں بلکہ دین کا نفاذ ہے۔

تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ طالبان ہمارے بچے ہیں، افغانستان میں جہاد کرنے والے طالبان پر ہم فخر کرتے ہیں۔ روس کی شکست مدرسہ حقانیہ کی مرہون منت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارا ہدف کبھی وزارت اور اقتدار نہیں رہا، اس کے باوجود بہت سے ساتھی بغیر بتائے ساتھ چھوڑ گئے۔ یہ حقانیہ کی برکات اور کاوشیں تھی کہ سویت یونین کو ٹکڑے ٹکرے کیا۔

انہوں نے کہا کہ عافیہ صدیقی کو 85 سال کی سزا پر حکومتی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔ /۹۸۹/ف۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬