21 January 2017 - 10:32
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425818
فونت
پاکستان کے وزیراعظم،وفاقی وزیرداخلہ، گورنر خیبر پختوںخوا اور اس ملک کی سیاسی اور مذھبی جماعتوں نے پارا چنار میں ہونےوالے دھماکے میں متعدد افراد کے جاں بحق اور زخمی ہونے کی مذمت کی۔
 پارا چنار دھماکہ

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، پاکستان کےوفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان نے پارا چنار دھماکے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کرتے ہوئے واقعے کی فوری طور پر رپورٹ طلب کرلی ہے۔

پاکستان کی سیاسی اور مذھبی جماعتوں منجملہ تحریک انصاف، پیپلز پارٹی، مجلس وحدت مسلمین، جماعت اسلامی، عوامی نیشنل پارٹی اور پاکستان عوامی تحریک نے پارا چنار دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ تکفیری دہشتگردوں کے خلاف بھر پور کارروائی کی جائے۔

ادھر مشیراطلاعات خیبرپختونخوا مشتاق غنی نے پاراچنار دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ متاثرہ علاقے میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے

آج صبح پارا چنار سبزی منڈی میں دھماکے سے 23 افراد جاں بحق جبکہ 40 سے زائد خمی ہوگئے دھماکہ ریموٹ کنٹرول کے ذریعے کیا گیا۔

زخمیوں کو ایجنسی ہیڈ کوارٹر ہسپتال پاراچنار منتقل کیا جا رہا ہے۔ جبکہ جاں بحق ہونے والے افراد کو مرکزی امام بارگاہ اور کالج کالونی کی مسجد میں بھی منتقل کیا جارہا ہے۔

ذرائع کے مطابق صبح کے وقت سبزی منڈی میں لوگوں کی بڑی تعداد جمع ہوتی ہے، دہشتگردوں نے منظم منصوبہ بندی کے تحت اس آسان ہدف کو نشانہ بنایا۔

واضح رہے کہ  پارا چنار کی عید گاہ مارکیٹ میں تھوڑی دیر قبل ہونے والے دھماکے میں 5 افراد جاں بحق اور 30 سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں جبکہ مزید ہلاکتو ں کا خدشہ ہے۔

پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق دھماکہ پرانی سبزی منڈی میں اس وقت ہوا جب وہاں پر لوگوں کا سبزی خریدنے کیلئے رش لگا ہوا تھا۔

سکیورٹی اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریش شروع کردیا ہے جبکہ ریسکیو آپر یشن بھی جاری ہے۔

دھماکہ میں زخمی ہونے والے افراد کو ایجنسی ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بھی عید گاہ مارکیٹ میں دو دھماکے ہوچکے ہیں۔/۹۸۸/ ن۹۴۰

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬