20 January 2019 - 17:08
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 439566
فونت
اکستان میں ساہیوال میں سی ٹی ڈی کے مبینہ مقابلے کے خلاف جاں بحق افراد کے لواحقین نے شدید احتجاج کرتے ہوئے لاشیں رکھ کر دھرنا دے دیا اور سی ٹی ڈی اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں ساہیوال میں سی ٹی ڈی کے مبینہ مقابلے کے خلاف جاں بحق افراد کے لواحقین نے شدید احتجاج کرتے ہوئے لاشیں رکھ کر دھرنا دے دیا اور سی ٹی ڈی اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا۔

ساہیوال واقعے کے خلاف جاں بحق افراد کے لواحقین اور عام شہریوں کے احتجاج کا سلسلہ جاری ہے اور وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی تسلیاں ورثاء کو مطمئن نہ کرسکیں۔ ورثاء نے حکومت کے خلاف سخت نعرہ بازی کرتے ہوئے کہا کہ جب تک سی ٹی ڈی اہلکاروں کے خلاف ایف آئی آر درج نہیں کی جائے گی احتجاج جاری رہے گا۔

ادھر لاہور میں بھی مظاہرین نے چونگی امر سدھو کے مقام پر فیروز پور روڈ کو دونوں طرف سے بند کردیا جس کے نتیجے میں ٹریفک کی روانی متاثر ہوگئی جبکہ میٹرو بس سروس بھی بند ہوگئی۔

مقتول خلیل کے بھائی جلیل نے کہا کہ انصاف ملنے تک لاشوں کی تدفین نہیں ہوگی۔ ہماری ایف آئی آر متعلقہ تھانہ میں دینے کی بجائے لاہور میں درج کروانے کا کہا جا رہا ہے، جبکہ پولیس نے ہماری ایف آئی آر کاٹنے کی بجائے مرنے والوں پر مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬