25 February 2020 - 12:42
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 442179
فونت
دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کےخلاف دھرنےپر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں متعدد افراد شہید اور زخمی ہوگئے ہیں۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران نئی دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کےخلاف دھرنےپر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں متعدد افراد شہید اور زخمی ہوگئے ہیں۔

بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کے خلاف دھرنے پر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر دھاوا بول دیا، دہلی کے جعفرآباد اور گوکل پوری کے علاقے میدان جنگ بنے رہے۔

پولیس اہلکاراور بی جے پی کے غنڈوں نے مل کرمظاہرین پر حملہ کردیا، دہشت گرد ہندؤوں نے مظاہرین کو لاٹھیوں اور ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بنایا جب کہ سڑکوں پر کھڑی گاڑیوں کو آگ لگادی، املاک کو بھی نقصان پہنچایا۔

بی جے پی رہنما نےگزشتہ روز مظاہرین کو تین دن میں دھرناختم کرنےکی دھمکی دی تھی۔

واضح رہے کہ مودی حکومت کی جانب سے بھارت میں شہریت کے متنازع قانون کے منظور ہونے کے بعد سے ملک گیر مظاہرے ہورہے ہیں جسے بھارتی پولیس سختی سے کچلنے کی کوشش کر رہی ہے۔

بھارتی پولیس کی مظاہرین پر براہ راست فائرنگ اور تشدد سے درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوچکے ہیں جن میں زیادہ تعداد مسلمانوں کی ہے۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پرطرفدارترین