‫‫کیٹیگری‬ :
17 October 2016 - 12:06
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 423885
فونت
نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کے خلاف کریک ڈاؤن؛
نائجیریا کی فوج نے جوس شہر میں اسلامی تحریک کے سرکردہ رہنما مولانا شیخ آدم کو گرفتار کر لیا ہے۔
حجت الاسلام شیخ آدم

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، م‍قامی ذرائع کا کہنا ہے کہ نائیجیریا کی فوج نے اسلامی تحریک کے سربراہ آیت اللہ ابراہیم زکزکی کے نمائندے شیخ آدم کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

اسلامی تحریک کے ذرا‏ئع کا کہنا ہے کہ شیخ آدم کی گرفتاری بغیر کسی عدالتی حکم  کے عمل لائی گئی ہے اور فوجی حکام ان کے بارے میں کسی بھی قسم کی معلومات فراہم کرنے سے گریز کر رہے ہیں۔

ان کی گرفتاری ایسے وقت میں عمل میں آئی ہے جب نائیجیریا کی فوج نے یوم عاشورہ پر شیخ آدم کے گھر پر حملہ کرکے اس سے متصل امام بارگاہ میں آگ لگادی تھی۔

نائیجیریا کی فوج نے مذکورہ امام بارگا کو آگ لگانے سے پہلے وہاں موجود عزاداروں پر فائرنگ بھی کی تھی جس کے نتیجے میں اٹھارہ عزادار شہید اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

نائیجیر کی اسلامی تحریک کے سربراہ آیت اللہ ابراہیم الزکزکی پچھلے ایک سال سے جیل میں بند ہیں۔ نائیجیر کے صوبے کادونا کی حکومت نے شیعہ مسلمانوں کی نمائندہ تنظیم تحریک اسلامی کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی ہے اور اس تنظیم کے ترجمان کی گرفتاری کا بھی حکم دیا ہے۔

اکثر مبصرین کا خیال ہے کہ نائیجیریا کی حکومت اور فوج پر سعودی عرب اور اسرائیل کے اثر و رسوخ کی وجہ سے ملک کی شیعہ آبادی کو سرکاری سطح پر تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔

نائیجیریا کی فوج نے گزشتہ سال دسمبر میں چہلم امام حسین علیہ السلام کے موقع پر زاریا شہر میں واقع امام بارگاہ بقیت اللہ پر حملہ کرکے سات سو کے قریب عزاداروں کو شہید کردیا تھا۔

اس سے ایک سال قبل نائیجیریا کی فوج نے صیہونی اور سعودی اثر وسوخ کے باعث عالمی یوم القدس کی ریلی پر فائرنگ کردی تھی جسں میں نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے سربراہ ابراہیم  الزکی کے دو بیٹوں سمیت پینتس افراد شہید ہوگئے تھے۔/۹۸۸/ن۹۴۰

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬