20 October 2016 - 19:34
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 423951
فونت
حجت الاسلام ناصر عباس جعفری:
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے کہا : حکومت یہ بات ذہن نشین کر لے کہ ہمارے ماتمی جلوس احتجاجی جلوسوں میں بھی تبدیل ہوسکتے ہیں ۔
حجت الاسلام ناصر عباس جعفری

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل حجت الاسلام ناصر عباس جعفری نے محرم الحرام کے آغاز سے عزاداروں کی ہونے والی شیعہ ٹارگٹ کلنگ اور کریکر دھماکے کی شدید الفاظ میں مزمت کی ہے۔

انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے بیان کیا : وحدت ہاؤس کراچی سے جاری اپنے ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ ایام عزاء کی ابتداء سے ہی ملک بھر میں دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے، جو وفاقی و صوبائی حکمومتوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے کہا : کوئٹہ میں بس پر فائرنگ کے نتیجے میں شیعہ کمیونٹی کی پانچ خواتین اور واہ کینٹ میں دو شیعہ افراد کو دہشت گردی کا نشانہ بنائے جانے سمیت کراچی گلستان جوہر میں معروف ماہر تعلیم منصور صادق زیدی اور اب مسجد و امام بارگاہ در عباس پر کریکر حملے کے نتیجے میں شہید فراز بشیر کی شہادت اور ۲۰ سے زائد افراد کے زخمی ہونے پر شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ محرم الحرام کے دوران امن و امان کے قیام کے لئے غیر معمولی سکیورٹی کے حکومتی دعوے محض طفل تسلی ثابت ہو رہے ہیں۔

انہوں نے بیان کیا : حکومت نے دہشت گردی کے خاتمے کی بجائے نیشنل ایکشن پلان کا سارا زور عزاداری کو محدود کرنے کی کوشش پر لگا رکھا ہے، یہ غیر منصفانہ طرز عمل کسی طور قبول نہیں، عزاداروں اور عزاداری کی حفاظت کے لئے ہم اپنے اصولی موقف سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

حجت الاسلام ناصر عباس جعفری نے بیان کیا : حکومت یہ بات ذہن نشین کر لے کہ ہمارے ماتمی جلوس احتجاجی جلوسوں میں بھی تبدیل ہوسکتے ہیں، ملک بھر میں محرم الحرام کے آغاز سے ۹ شیعہ افراد کا دہشت گردی کی بھینٹ چڑھ جانا متعلقہ اداروں کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

انہوں نے تاکید کرتے ہوئے کہا : کراچی میں دہشت گردی کا حالیہ واقعہ کالعدم مذہبی جماعتوں کی کارستانی ہے، ان کے خلاف فوری ٹارگٹڈ آپریشن کیا جائے۔ کراچی میں صوبائی حکومت جان بوجھ کر حالات خراب کرنے پر تلی ہوئی ہے، ہماری عبادات میں سرکاری اداروں کی دانستہ مداخلت حکومت کے لئے پریشانی کا باعث بن سکتی ہے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے کہا : ہم اپنی جماعت اور ذات پر تو سمجھوتہ کرسکتے ہیں لیکن عزاداری پر کوئی سمجھوتہ ممکن نہیں، کسی بھی غیر آئینی رکاوٹ کو عزاداری کی راہ کی دیوار نہیں بننے دیا جائے گا۔

حجت الاسلام ناصر عباس جعفری نے بیان کیا : پاکستان بھر میں عزاداری کے جلوسوں اور مجالس کے پروگراموں کو حکومت کی جانب سے فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬