22 January 2017 - 19:20
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425848
فونت
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری کے اعلان پر سانحہ پاراچنار کے خلاف ملک بھر کی طرح کراچی میں بھی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔
مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری کے اعلان پر سانحہ پاراچنار کے خلاف ملک بھر کی طرح کراچی میں بھی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، اس موقع پر مولانا مبشر حسن، مولانا احسان دانش، میثم عابدی، میر تقی ظفر سمیت دیگر رہنما و کارکنان موجود تھے۔

احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ عالمی دہشت گرد تنظیم داعش کو پاکستان میں داخل ہونے سے روکا جائے، امت مسلمہ میں بھڑکائی جانے والی آگ کو طے شدہ سازش کے تحت پاکستان منتقل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سالمیت و استحکام داعش اور دیگر کالعدم دہشتگرد جماعتوں کی بیخ کنی سے مشروط ہے، انہیں پاکستان میں فعال ہونے کا موقع دینا اپنے گھر کو آگ لگانے کے مترادف ہو گا۔

مقررین نے کہا کہ حکومتی اداروں کی لمحہ بھر کی غفلت ملکی بقاء و سالمیت کو سنگین خطرات سے دوچار کرکے رکھ دے گی۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خاتمے کیلئے ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کو ایک جیسی رفتار کے ساتھ اہداف کی طرف بڑھنا ہوگا، دہشتگردوں کے سہولت کاروں اور سیاسی پشت پناہوں کو نکیل ڈالے بغیر مطلوبہ نتائج کا حصول ممکن نہیں، دہشتگردوں کی سرکوبی کیلئے ملک بھر میں بھرپور آپریشن کا آغاز کیا جائے۔

اس موقع پر علمائے کرام و رہنماؤں نے وزیراعلیٰ و آئی جی سندھ سے مطالبہ کیا کہ سانحہ پارا چنار کے بعد کراچی سمیت سندھ بھر میں فول پروف سیکیورٹی انتظامات کو یقینی بنایا جائے۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬