09 July 2018 - 18:59
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 436552
فونت
بیلجیم:
بروکسل کی اعلی مذہبی شخصیت نے مرکزی جامع مسجد کو بند کرنے کا مطالبہ کردیا ۔
مسجد

رسا نیوز ایجنسی کی الیوم السابع سے رپورٹ کے مطابق، بروکسل شہر کی مذہبی شخصیت «الآن کورتوا» نے مذہبی ہم آہنگی کے لیے تما مساجد پر کڑی نظارت کے ساتھ مرکزی جامع مسجد کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

بیلجیم سیکورٹی اداروں کے مطابق اس سے پہلے مذکورہ مسجد میں شدت پسندانہ مواد پر مبنی کتابوں کی موجودگی کی رپورٹ درج ہوچکی ہے

سال ۲۰۱۷ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مسجد سے شدت پسندانہ بیانات اور خطبے بھی صادر کیے جاتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ  سال ۱۹۷۱ میں ایک معاہدے کے تحت مرکزی مسجد کو بیجلیم حکومت نے سعودی حکومت کی زیرنگرانی چلانے کی اجازت دی تھی تاہم سال کے آخر میں نامعلوم وجوہات پر دوبارہ مسجد کی ذمہ داری سعودی سے لے لی گیی۔

رپورٹ کے مطابق مسجد واپس لینے کی اہم وجہ وہابی شدت پسندانہ افکار کی ترویج ہے اور کہا جاتا ہے کہ فرانس اور بروکسل حملوں کے عناصر اس مسجد کے امام کے خطبوں سے متاثر تھے۔/ ۹۸۸/ ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬