22 August 2020 - 12:52
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 443522
فونت
علامہ صادق جعفری:
ایم ڈبلیو ایم رہنما نے کراچی میں احتجاج سے خطاب میں کہا کہ فلسطین و اسرائیل کی جنگ کسی زمینی تنازعے کے نام نہیں بلکہ یہ حق و باطل کا معرکہ ہے، دو متصادم قوتیں اپنے ہم خیال حکمرانوں کو اپنے اپنے بلاک میں شامل کر رہی ہیں ۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زیر اہتمام جمعہ کے روز کراچی، اسلام آباد، لاہور، پشاور، کوئٹہ، گلگت بلتستان، آزاد کشمیر، سکھر، ٹنڈو محمد خان، شکار پور، حیدرآباد، ملتان، بہاولپور، رحیم یار خان، فیصل آباد، جھنگ، چنیوٹ، سرگودھا، اوکاڑہ، ساہیوال اور لیہ سمیت مختلف اضلاع میں ”اسرائیل مردہ باد“ریلیاں نکالی گئیں۔ \

احتجاجی مظاہروں اور ریلیوں میں ملی یکجہتی کونسل اور امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن سمیت دیگر شیعہ سنی جماعتیں بھی شریک تھیں۔ ریلیوں میں مرکزی، صوبائی اور ضلعی رہنماوں کے علاوہ بڑی تعداد میں کارکنان نے شرکت کی۔ شرکاء احتجاج نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پر اسرائیل عرب اتحاد اور امریکہ کے خلاف نعرے درج تھے۔ کارکنوں نے فلسطینوں کی حمایت اور اسرائیل کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔

مقررین نے احتجاجی ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے بیت المقدس کی آزادی کے مطالبے کو دینی غیرت و حمیت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عرب حکمرانوں نے اسرائیل کی غاصب ریاست کو تسلیم کر کے امت مسلمہ کی پیٹھ میں خنجر گونپا ہے، مسلمانوں کے لبادے میں چھپے ہوئے ان صیہونی ایجنٹون کو یہ ناپاک جسارت مہنگی پڑے گی، دنیا بھر کے مسلمان متحدہ عرب امارات کے اس اقدام پر شدید نفرت کا اظہار کررہے ہیں۔

کراچی ایم ڈبلیو ایم کی جانب سے جامع مسجد حیدری کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا،

ایم ڈبلیو ایم کراچی کے رہنما علامہ محمد صادق جعفری نے خطاب میں کہا کہ اسرائیل عالم اسلام کا بدترین دشمن ہے، اس کی شاطرانہ چالوں سے دوست دشمن کوئی بھی محفوظ نہیں، جو مسلمان حکمران اسرائیل کو اپنا دوست سمجھتے ہیں وہ صیہونی فریب کاریوں سے دانستہ طور پر لاعلم بنے بیٹھے ہیں، عرب حکمرانوں کا وقتی فوائد حاصل کرنے کے لئے اپنی نسلوں کو یرغمال بنانے کا یہ سودا انتہائی احمقانہ اور بزدلانہ ہے،جس پر تاریخ انہیں کبھی معاف نہیں کرے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ فلسطین و اسرائیل کی جنگ کسی زمینی تنازعے کے نام نہیں بلکہ یہ حق و باطل کا معرکہ ہے، دو متصادم قوتیں اپنے ہم خیال حکمرانوں کو اپنے اپنے بلاک میں شامل کر رہی ہیں، صیہونیت کے جو دوست ہیں وہ عالم اسلام کے کبھی خیر خواہ نہیں ہو سکتے، اب امت مسلمہ کے فیصلے کا وقت آن پہنچا ہیں، عالم استکبار کے حامی عالم اسلام کے دشمن ہیں چاہے وہ کسی بھی لبادے میں ہوں۔

انہوں نے کہا کہ بیت المقدس کی آزادی اور اسرائیل کی نابودی تک اس تنازعے کا خاتمہ ممکن نہیں، جو مسلم حکمران صیہونیت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھا رہے ہیں وہ مسلمانوں کو کمزور کرنا چاہتے ہیں، انہیں اپنے مذموم مقاصد میں شدید ہزیمت کا سامنا کرنا پڑے گا، امریکہ خطے میں اسرائیلی بالادستی کے قیام کا جو خواب دیکھ رہا ہے اس کی تعبیر انتہائی بھیانک ہوگی۔/۹۸۸/ن

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬