18 March 2014 - 19:03
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 6536
فونت
حجت الاسلام والمسلمین سید ساجد علی نقوی:
رسا نیوز ایجنسی – سرزمین پاکستان کے نامور شیعہ عالم دین حجت الاسلام والمسلمین سید ساجد علی نقوی نے اس بات کی تاکید کرتے ہوئے کہ ملک میں شیعہ سنی کا کوئی مسئلہ نہیں کہا: چند سازشی عناصر فرقہ واریت کی آڑ میں مذموم مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں ۔


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، قائد ملت جعفریہ پاکستان اور شیعہ علماء کونسل پاکستان کے سربراہ حجت الاسلام والمسلمین سید ساجد علی نقوی نے علی پور میں شیعہ علماء کونسل پنجاب پاکستان کے نائب صدر اور معروف سیاسی و سماجی شخصیت سردار کاظم علی حیدری کے چہلم کی مجلس کو خطاب کرتے ہوئے کہا: قانون کی حکمرانی کو یقینی بنانے سے ہی بدامنی اور دہشتگردی کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے  ۔


انہوں نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ مرحوم حیدری جیسے لوگ قومی اثاثہ اور امن و سلامتی کی ضمانت ہوتے ہیں ایسے کردار کو زندہ رکھنا ہر محبِ وطن شہری کی ذمہ داری ہے کہا: قومی سلامتی اور ملک کا استحکام عدل و انصاف کی فراہمی سے ممکن ہے، قانون کی حکمرانی کو یقینی بنانے سے ہی بدامنی اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے، قیام امن کیلئے مذاکراتی عمل کو آئین کے دائرے میں رکھنا ہوگا ۔


حجت الاسلام والمسلمین نقوی نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ ملک میں شیعہ سنی کا کوئی مسئلہ نہیں بلکہ چند سازشی عناصر فرقہ واریت کی آڑ میں مذموم مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں کہا: باہمی رواداری اور اتحاد ویکجہتی کو مضبوط بنا کر ان سازشوں کو ناکام بنانا ہوگا ۔


انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ ملک اس وقت سنگین مسائل سے دوچار ہے اور بعض قوتیں اپنی منفی سوچ اور تخریبی کردار کے ذریعہ جلتی پر تیل ڈالنے کا کردار ادا کر رہی ہیں کہا: پوری قوم کو یکجا ہوکر ایسی ملک دشمن قوتوں کا مقابلہ کرنا ہوگا اور ریاستی اداروں کو محب وطن اور وطن دشمنوں کے درمیان حدِ فاصل قائم کرنا ہوگی۔ 


سرزمین پاکستان کے نامور شیعہ عالم دین نے تھر کے قحط زدہ علاقہ میں حکومت اور خیراتی اداروں کو متاثرہ انسانوں کی امدادی کارروائیوں پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت پر تاکید کی اورکہا: ان کی طرف سے متاثرہ خاندانوں کی امداد کیلئے ضروری سامان کے ساتھ امدادی ٹیمیں روانہ کردی گئی ہیں، جو مسلسل تھر کے علاقہ میں متاثرین کو امداد پہنچا رہی ہیں اور وہ براہ راست امدادی سرگرمیوں کی نگرانی کر رہے ہیں۔


دوسری جانب شیعہ علماء کونسل پنجاب اور خیبر پختونخوا کے صوبائی صدور مظہر عباس علوی اور  محمد رمضان توقیر نے مرحوم کاظم علی حیدری کی قومی و مذہبی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ معاشرے میں سرگرم عمل منفی سوچ کی حامل قوتوں کو ناکام بنانے کیلئے تمام مکاتب فکر کے علماء اور سیاسی و سماجی رہنمائوں کو قوم کی درست سمت کی طرف رہنمائی کرنا ہوگی۔


واضح رہے کہ چہلم کے اجتماع میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی اور مختلف مکتبہ فکر کے راہنمائوں نے مرحوم سردار کاظم علی حیدری کی امن و یکجہتی کے قیام کی جدوجہد اور مثبت کردار کو سراہتے ہوئے انہیں زبردست خراجِ تحسین پیش کیا۔


اجتماع سے ڈسٹرکٹ علماء امن کونسل مظفرگڑھ کے چیئرمین ڈاکٹر عقیل الرحمان پیرزادہ، صوبائی جنرل سیکرٹری بین المذاہب ہم آہنگی پنجاب شفیق الرحمان آزاد، جمعیت اہلحدیث کے راہنما قاری عبدالغنی ثاقب، جمعیت علماء پاکستان کے راہنما پروفیسر محمد شفیع خان، ایم کیو ایم کے ضلعی راہنما غلام علی بخاری، شیعہ علماء کونسل ضلع مظفرگڑھ کے صدر سجاد حسین قمی، ضلعی جنرل سیکرٹری شیعہ علماء کونسل سید اختر حسین بخاری، جے ایس او پاکستان کے سابق مرکزی جنرل سیکرٹری تقی حیدر جوادی، جماعت اہلسنت کے راہنما غوث بخش فریدی کے علاوہ نجم الحسنین خان، توصیف کمیلی، منور حسین نقوی، تنویر الکاظم، مومن حسین قمی، محمد باقر گھلو، احسان اتحادی، پروفیسر خادم لغاری، مولانا صابر حسین طاہر، زاہد حسین زیدی، رانا محمد حسین، وسیم عباس خان اور دیدار علی زیدی نے بھی خطاب کیا۔


چہلم کے اجتماع میں سابق وفاقی وزیر سردار عبدالقیوم خان جتوئی، سابق ایم پی اے سردار رسول بخش خان جتوئی، سید اجمل المرتضٰے ایڈووکیٹ، ملک محمد علی گھلو، آغا حسن کاظمی، خادم حسین گھاگھری، حیدر علی انقلابی صوبائی آرگنائزر JSO پنجاب اور دیگر متعدد سیاسی، مذہبی اور سماجی شخصیات نے شرکت کی ۔


نیز اس موقع پر قائد ملت جعفریہ پاکستان حجت الاسلام والمسلمین سید ساجد علی نقوی نے مرحوم کے صاحبزادگان سردار حیدر علی خان، سردار کامران علی خان کی دستار بندی بھی کی۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬