03 July 2018 - 19:47
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 436482
فونت
جنرل انتونیو گوٹرس :
اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے کہا کہ کیمپوں میں موجود لوگوں سے سفاکیت کے ناقابل یقین واقعات سنے، ان تمام مظالم کی ذمہ داری میانمار کی ہے اور عالمی برادری بھی یہ مظالم رکوانے میں ناکام ہوئی ہے۔
میانمار

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل جنرل انتونیو گوٹرس نے میانمار حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کے خلاف مجرمانہ کارروائیوں ميں ملوث افراد کے خلاف کارروائي کرے۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے میانمار حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ان افراد کو قانون کے کٹہرے میں لائے جنھوں نے روہنگیا مسلمانوں پر مظالم کیے اور ان کو اپنے وطن سے بے دخل ہونے پر مجبور کیا۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹرس نے میانمار میں مظالم سے تنگ آکر بنگلہ دیش آنے والے روہنگیا مسلمانوں کے کیمپوں کا دورہ کیا اور ان پر ہونے والے مظالم کی داستانیں سنیں۔ 

گوٹرس نے کہا کہ میانمار حکومت نے روہنگیا مسلمانوں پر ظلم کرکے انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی کی ہے۔

روہنگیا خواتین نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو بتایا کہ ان پر ظلم کے ساتھ زیادتی بھی کی گئی۔گوٹرس نے کہا کہ روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ وہ ظلم کیا گیا جس کی تاریخ میں کم ہی مثال ملتی ہے۔

گوٹرس کا کہنا تھاکہ کیمپوں میں موجود لوگوں سے سفاکیت کے ناقابل یقین واقعات سنے، ان تمام مظالم کی ذمہ داری میانمار کی ہے اور عالمی برادری بھی یہ مظالم رکوانے میں ناکام ہوئی ہے۔

میانمار حکومت کو ہر حال میں مجرموں کو سزا دینا ہوگی۔ تقریباً 7 لاکھ روہنگیا مسلمان میانمار سے ہجرت کرکے بنگلہ دیش میں مقیم ہیں۔/۹۸۹/ف۹۴۰/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬