‫‫کیٹیگری‬ :
20 August 2015 - 23:51
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 8397
فونت
رسا نیوز ایجنسی ـ یمن کی مسلح افواج نے سعودی عرب کے جیزان صوبے میں واقع سعودی عرب کی بحریہ کے سب سے بڑے مرکز کو اپنے حملے کا نشانہ بنایا ہے۔
 يمن


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمن کی مسلح افواج نے سعودی عرب کے جیزان صوبے میں واقع سعودی عرب کی بحریہ کے سب سے بڑے مرکز کو اپنے حملے کا نشانہ بنایا ہے۔

یمن پر سعودی جارحیت کے ابتدائی دنوں میں سعودی وزیر دفاع محمد بن سلمان نے یمنی عوام پر حملہ کرنے کے حوالے سے، اس مرکز کی صلاحیتوں اور وسائل کا جائزہ لیا تھا۔

دوسری جانب سعودی فوجی، جیزان کے وادی جارہ علاقے کو، یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس سے واپس لینے میں ناکام ہو گئے۔

مسلح افواج اور عوامی رضاکار فورس نے سعودی عرب کے فوجیوں کو بھاری نقصان پہنچانے کے علاوہ، انہیں پسپائی پر مجبور کر دیا جبکہ اس آپریشن میں متعدد سعودی فوجی اہلکار، ہلاک بھی کر دیئے گئے اور وہیں اس دوران یمنی افواج نے سعودی عرب کے جدیدترین ہتھیاروں کو بھی اپنے کنٹرول میں لے لیا۔
سعودی عرب کے جیزان علاقے میں یمن کی عوامی رضاکار فورسز نے سعودی افواج کی ایک بکتر بند گاڑی کو بھی ٹینک شکن میزائل سے نشانہ بنا کر تباہ کر دیا۔

یمنی فوجیوں نے الشّبکہ، عش اور مطبع نامی علاقوں کو بھی راکٹوں اور مارٹر گولوں کا نشانہ بنایا۔

دوسری جانب سعودی فضائیہ نے صوبہ صنعا میں واقع دشت ملح کے تاریخی علاقے پر بمباری کی۔ سعودی لڑاکا طیاروں نے اس علاقے میں موجود ایک تاریخی قلعے سمیت آثار قدیمہ کی متعدد عمارتوں کو شدید نقصان پہنچایا۔

یمن کے محکمہ تاریخی میراث نے، سعودی عرب کے اس اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ عالمی اداروں میں اس قسم کے گھناؤنے اقدام کی، شکایت کی جائے گی۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬