30 September 2016 - 13:06
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 423546
فونت
علی اکبر صالحی:
اسلامی جمہوریہ ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے سربراہ ڈاکٹر علی اکبر صالحی نے کہا: ایران کی معیشت مقامی بنیادوں پر استوار ہے اور تیزی کے ساتھ ترقی کر رہی ہے۔
 علی اکبر صالحی

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، ڈاکٹر علی اکبر صالحی نے آسٹریا کے اخبار وینر زائٹونگ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت ایران غیرملکی سرمایہ کاروں کے لیے مناسب ترین ملک ہے۔

انھوں نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی معیشت گزشتہ اڑتیس برسوں کے دوران خاص طور پر جنگ اور ظالمانہ پابندیوں کی وجہ سے مقامی بنیادوں پر استوار ہوئی ہے، کہا کہ ایران کی معیشت اب تیزی سے ترقی کے راستے پر گامزن ہے۔

ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے سربراہ نے مزید کہا: ایران کیسپیئن سی اور خلیج فارس کے درمیان واقع ہونے کے پیش نظر اسٹریٹیجک پوزیشن کے لحاظ سے، توانائی کے بے پناہ ذخائر کا حامل ہونے، ضروری بنیادی تنصیبات رکھنے، شاہراہ ریشم کے تاریخی راستے پر واقع ہونے، علاقے کی چالیس کروڑ کی منڈی، ماہر اور نوجوان افرادی قوت رکھنے اور سب سے اہم یہ کہ علاقے میں موجود بدامنی اور عدم استحکام کے باوجود امن و استحکام کا حامل ہونے کی وجہ سے غیرملکی سرمایہ کاروں کے لیے ایک مناسب ترین ملک ہے۔/۹۸۸/ن۹۳۰/ک۲۲۴

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬