18 January 2017 - 15:50
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425762
فونت
عراق کے اہل سنت کے مرکز استفتا نے خبر دار کیا ہے کہ امریکی سفارتخانے کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کیاجانا مسلمانوں کے خلاف اعلان جنگ سمجھا جائےگا
شیخ عامرالبیاتی


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، عراق کے اہل سنت کے فتوؤں کے مرکز کے ترجمان شیخ عامرالبیاتی نے امریکی سفارتخانے کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کئے جانے کے تعلق نئے امریکی صدر کے منصوبے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اقدام مسلمانوں کے خلاف اعلان جنگ اور بیت المقدس کو صیہونی حکومت کا دارالحکومت تسلیم کرانے کی گھناؤنی سازش ہے -

عراق کے اہل سنت کے فتوؤں کے مرکز کے ترجمان نے فارس نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کے نومنتخب صدر کا یہ فیصلہ انتہائی خودسرانہ اوراشتعال انگیزی پر مبنی ہے جس کی شدید الفاظ میں مذمت کی جانی چاہئے -

انہوں نے ان ملکوں کے خلاف جو اپنے سفارتخانے تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں عرب لیگ کے فوری اور ٹھوس اقدام کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ عرب رہنماؤں کو چاہئے کہ وہ ایسے ملکوں کا بائیکاٹ کردیں-

یاد رہے کہ صیہونی حکومت کے اخبار ہاآرتض نے اپنے تازہ ترین شمارے میں لکھا ہے کہ نومنتخب امریکی صدر ٹرمپ اپنا عہدہ سنبھالنے کے اگلے ہی دن یعنی اکیس جنوری کو امریکی سفارتخانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کا باضابطہ اعلان کردیں گے -/۹۸۸/ ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬