01 January 2020 - 13:02
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 441856
فونت
پاکستان:
علمائے پاکستان کے 40 رکنی وفد نے کرتارپور گورودوارے کا دورہ کے دوران بین المذاہب ہم آہنگی کے ساتھ ساتھ بین المسالک ہم آہنگی کے موضوع پر تبادلہ خیال ہوا۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، بین المذاہب ہم آہنگی کے فروغ کیلئے حکومت پنجاب کی جانب سے مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام کو کرتار پور میں گوردوارہ کا دورہ کروایا گیا۔ 

علمائے کے اس دورے کا اہتمام متحدہ علماء بورڈ پنجاب کی جانب سے کیا گیا تھا۔

وفد میں مختلف مکاتب فکر کے 40 علمائے کرام شریک تھے جن میں مولانا محمد حسین اکبر، مولانا افضل حیدری، حافظ سید کاظم رضا، حافظ طاہر اشرفی، ڈاکٹر راغب حسین نعیمی، مولانا سید ضیااللہ بخاری، پیر ضیاء الحق نقشبندی، مولانا عبدالرحمان لدھیانوی، مولانا محمد خان لغاری سمیت دیگر علمائے کرام شریک تھے۔

علمائے کرام نے اس مفید اور معلوماتی دورے کا اہتمام کرنے پر پنجاب حکومت کا شکریہ ادا کیا۔

علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر کا کہنا تھا کہ انتظامات اعلیٰ معیار کے تھے، جبکہ اس دورے سے جہاں بین المذاہب ہم آہنگی کا موقع ملا وہیں بین المسالک ہم آہنگی کے موضوع پر بھی علمائے کرام کے درمیان تبادلہ خیال ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ایسے ایونٹس مختلف مذاہب کو قریب لانے میں معاون ثابت ہوتے ہیں۔

پیر ضیاء الحق نقشبندی نے کہا کہ متحدہ علماء بورڈ کی یہ کاوش لائق تحسین ہے، یقیناً ایسے پروگرامز سے بھائی چارے کو فروغ ملتا ہے۔/۹۸۸/ ن

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پرطرفدارترین