‫‫کیٹیگری‬ :
27 June 2013 - 13:59
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 5586
فونت
آیت الله خاتمی :
رسا نیوز ایجنسی ـ آیت الله خاتمی نے اسلامی دنیا و انسانیت کے طرفداروں سے دنیا میں تشیع کے قتل عام کے خلاف متحد ہونے کی تاکید کی ہے اور کہا : اس وقت شیعہ و سنی اور وہ تمام لوگ جو انسان کے لئے ذمہ داری کا احساس کرتے ہیں وہ سب لوگ مل کر ان وحشی آدم کش کے مقابلہ میں محاذ قائم کریں ۔
آيت الله خاتمي


حوزہ علمیہ قم ایران کے مشہور و معروف استاد آیت الله سید احمد خاتمی نے رسا نیوز ایجنسی سے گفت و گو میں مصر کے شیعوں کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے اظہار کیا : اسلامی دنیا چاہے شیعہ ہوں یا سنی سب لوگ ان ظالم و جنایت کاروں کے خلاف متحد ہوں کیونکہ وہ لوگ ایسے خائن ہیں جو کہ خود کو اسلام کے نام پر تعارف کراتے ہیں اور اسلامی اصول کی مخالفت کرتے ہیں ؛ اور دوسری طرف انسانی دنیا جو انسانیت کے لئے ذمہ داری کا احساس کرتے ہیں وہ ان وحشی انسانیت کے قاتل کے مقابلہ میں محاذ قائم کریں ۔

انہوں نے اس بیان کے ساتہ کہ مصر میں شیعوں کے قتل کی تحریک کو موقت نہیں جانا ہے اور کہا : اسلامی دنیا میں تکفیریوں کے ظالم و جرائم کا یہ ایک نمونہ ہے ؛ ان ظالموں کی سفاکیت و بربریت شام ، بغداد اور پاکستان میں باقاعدہ بیان کر رہی ہے کہ ان جنایت کاروں کو ذمہ داری دی گئی ہے کہ اسلامی دنیا میں آتش انگیزی و اختلاف پیدا کریں ۔

حوزہ علمیہ قم ایران کے مشہور و معروف استاد نے اس تاکید کے ساتہ کہ شیعوں کا قتل عام سامراجی و استبدادی سازش کی بنا پر ہے بیان کیا : یہ بدبخت جاہل افراد و کم عقل سامراجی دنیا کے مقصد کی تکمیل میں مشغول ہیں یہ مجرم بعض وقت ان جانے میں تو اکثر جانتے ہوئے امریکا اور برطانیہ کے نوکر ہیں ۔

آیت الله خاتمی نے وہابیوں کے خائن مفتی کو ان مجرموں سے زیادہ ظالم جانا ہے اور کہا : وہ لوگ تکفیری فتوی کے ذریعہ ان وحشی افراد کو قتل اور انسان کشی و مسلمان کشی پر ابھارتے ہیں ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬