02 March 2014 - 16:53
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 6478
فونت
مسجد اقصٰی پر اسرائیلی حملے کے خلاف؛
رسا نیوز ایجنسی – گذشتہ روز مسجد اقصٰی پر اسرائیلی حملے اور نمازیوں پر پابندی کے خلاف فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان اور جمعیت علماء پاکستان نے میمن مسجد کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا ۔
مظاھرے

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان اور جمعیت علماء پاکستان نے مسجد اقصٰی پر اسرائیلی حملے اور نمازیوں پر پابندی کے خلاف گذشتہ روز میمن مسجد کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا ۔


اس رپورٹ کے مطابق،  احتجاجی مظاہرے میں شریک مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر امریکہ مردہ باد، اسرائیل نا منظور، مسجد اقصٰی پر حملے کی مذمت، فلسطین کی آزادی اور مسجد اقصٰی کی بازیابی تک جنگ رہے گی کے نعرے درج تھے، مظاہرین نے امریکہ اور اسرائیل کے خلاف زبردست نعرے بازی کی اور امریکی اور اسرائیلی پرچم بھی نذر آتش کئے۔


مقررین نے احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کا کہا: فلسطین کا دفاع پاکستان کا دفاع ہے اور پاکستان کا دفاع اسلام اور پوری انسانیت کا دفاع ہے۔


انہوں نے مسجد اقصٰی پر حالیہ اسرائیلی حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے مسجد اقصٰی پر اسرائیلی حملہ کو اسلام پر حملے کے مترادف جانا اور کہا: بیت المقدس فلسطین کا دارالحکومت اور مسلم امہ کا قبلہ اول ہے، عالمی دہشت گرد امریکہ کو یہ اختیار نہیں کہ وہ مسلمانوں کے مقدس مقام اور فلسطین کے دارالحکومت کی نوعیت کو تبدیل کرنے کا اعلان کرے۔


مقررین اس بات کی تاکید کرتے ہوئے کہ غاصب اسرائیل اور امریکہ چاہتے ہیں کہ مسلم دنیا فلسطین کے مسئلے کو فراموش کر دے اور یہی وجہ ہے کہ عالمی سامراج امریکہ اور اس کی ناجائز اولاد اسرائیل مسلم دنیا کی حکومتوں کو ان کے اندرونی مسائل میں الجھا رہی ہے، تاکہ مسئلہ فلسطین کے لئے بلند کی جانے والی صدائے احتجاج کو بند کر دیا جائے کہا: مشرق وسطٰی سمیت ایشیائی اور افریقی ممالک میں پھیلائی جانے والی انارکی میں امریکہ اور اسرائیل براہ راست ملوث ہیں اور خطے کے عدم استحکام کی وجہ سے سب سے زیادہ نقصان فلسطینی کاز کو پہنچ رہا ہے۔


مقررین نے پاکستان کی بگڑتی ہوئی صورتحال اور دہشت گردی کا مرکز و محور امریکہ اور اسرائیل کے حواریوں اور ایجنٹ قوتوں کو قرار دیتے ہوئے کہا: فلسطین کا دفاع پاکستان کا دفاع ہے اور پاکستان کا دفاع اسلام کا دفاع اور پوری انسانیت کا دفاع ہے۔


قابل ذکر ہے کہ اس مظاھرے میں جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی رہنما قاضی احمد نورانی صدیقی، جماعت اسلامی کراچی کے سابق امیر محمد حسین محنتی، فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے مرکزی ترجمان صابر کربلائی اور پاکستان عوامی مسلم لیگ کے مرکزی رہنما محفوظ یار خان نیز مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی کے رہنما مبشر حسن سمیت ناصر رضوان ایڈووکیٹ، قاری شکیل اور مولانا وحید یونس اور دیگر شریک تھے ۔


واضح رہے کہ دو روز قبل غاصب صیہونی افواج نے مسجد اقصٰی پر بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا تھا، دوسری جانب گذشتہ روز جان کیری نے فلسطین کا دارالحکومت بیت المقدس کے بجائے بیت حنینہ کو بنانے کی تجویز دی تھی ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬