25 January 2017 - 10:27
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 425905
فونت
شام سے متعلق آستانہ مذاکرات میں شریک فریقوں نے شام کی ارضی سالمیت کی حمایت اور دہشت گردوں کے خلاف جنگ کی ضرورت پر زور دیا ہے
آستانہ مذاکرات


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، قزاقستان کے دارالحکومت آستانہ میں شام سے متعلق صلح مذاکرات کے اختتامی بیان میں جسے منگل کی شام قزاقستان کے وزیرخارجہ نے پڑھ کر سنایا، کہا گیا ہے کہ یہ مذاکرات شامی حکومت اور مخالفین کے درمیان براہ راست مذاکرات کا پیش خیمہ ہوں گے اور آستانہ مذاکرات آئندہ جنیوا اجلاس کی کامیابی میں کردار ادا کریں گے -

بیان میں کہا گیا ہے کہ سبھی فریق  دہشت گرد گروہوں منجملہ داعش اور جبہہ النصرہ یا فتح الشام کے خلاف جنگ پر زوردیتے ہیں- آستانہ مذاکرات کے اختتامی بیان میں کہا گیا ہے کہ شام سے متعلق آئندہ مذاکرات بین الاقوامی قراردادوں کی بنیاد پر جلد سے جلد شروع ہونے چاہئیں اور جنیوا مذاکرات میں شامی حکومت کے مخالف مسلح گروہ بھی شریک ہوں گے -

بیان میں شام کی ارضی سالمیت اوراقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد تیئیس چھتیس کے مطابق شامی حکومت اور مخالفین کے مابین سیاسی مذاکرات جاری رکھنے پر زور دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ شام کا بحران فوجی طاقت کے ذریعے حل نہیں کیا جاسکتا-

بیان میں کہا گیا ہے کہ شام میں جنگ و خونریزی سلامتی کونسل کی قرارداد بائیس چون کے مطابق ختم  اور جنگ زدہ عوام کے لئے انسان دوستانہ امداد کی ترسیل کا راستہ کھول دیا جانا چاہئے -

بیان میں پورے شام میں جنگ بندی اور جنگ بندی کی نگرانی کرنے والی ایک کمیٹی کی تشکیل پر بھی اتفاق ہوا ہے-  بیان میں صراحت کے ساتھ کہا گیا ہے کہ جنگ بندی کا اطلاق ان علاقوں پر نہیں ہوگا جہاں داعش اور جبہہ النصرہ جیسے دہشت گرد گروہوں کا کنٹرول ہے -

آستانہ مذاکرات کے اختتامی  بیان میں شام میں  اقتدارکی منتقلی کے مقصد سے ایک میکانیزم تک پہنچنے پر بھی اتفاق رائے  کا ذکرکیا گیا ہے - بیان میں کہا گیا ہے کہ  شام سے متعلق سیاسی مذاکرات آئندہ آٹھ فروری کو جنیوا میں اقوام متحدہ کی نگرانی میں دوبارہ شروع ہوں گے -

واضح رہے کہ شام کے بحران کے حل کے لئے آستانہ مذاکرات ایران روس اور ترکی کی کوششوں سے پیر کو شروع ہوئے تھے جو منگل کی شام ختم ہوگئے -/۹۸۸/ ن۹۴۰

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬