17 January 2018 - 20:28
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 434677
فونت
عراق کے صوبے کرکوک کے گورنر نے اعلان کیا ہے کہ اس صوبے کے جنوب مغرب میں واقع علاقے الحویجہ کے ڈیڑھ ہزار پناہ گزین اپنے گھروں میں واپس لوٹ آئے ہیں۔
کرکوک دیرو الزور

رسا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کی رپورٹ کے مطابق، عراق کے صوبے کرکوک کے گورنر راکان الجبوری نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ آئندہ چند روز میں اور بھی پناہ گزینوں کی وطن واپسی عمل میں آئے گی، کہا کہ صوبے کرکوک کے پناہ گزینوں کی وطن واپسی، امن کی بحالی اور علاقے سے بارودی سرنگوں کا صفایا ہو جانے کے بعد سیکورٹی کے لائحہ عمل کے مطابق انجام پا رہی ہے۔

اس سے قبل عراقی کابینہ کے سیکریٹریٹ نے گیارہ جنوری کو اعلان کیا تھا کہ داعش دہشت گرد گروہ کے قبضوں سے آزاد ہونے والے علاقوں کے پچاس فیصد پناہ گزین اپنے گھروں کو واپس لو آئے ہیں۔

واضح رہے کہ داعش دہشت گرد گروہ نے دو ہزار چودہ میں امریکہ اور اس کے مغربی و عرب اتحادیوں منجملہ سعودی عرب کی مالی و فوجی حمایت و مدد سے عراق پر حملہ کر کے اس ملک کے مختلف شمالی و مغربی علاقوں پر قبضہ کر لیا تھا جہاں اس دہشت گرد گروہ نے عام شہریوں پر وحشیانہ ترین جرائم کا ارتکاب بھی کیا۔ مگر اب ان تمام علاقوں کو اس دہشت گرد گروہ کے قبضے آزاد کرایا جا چکا ہے۔

دوسری جانب مشرقی شام میں دیرالزور سے دہشت گردوں کا صفایا ہو جانے کے بعد اس صوبے کے تین ہزار سے زائد لوگ وطن واپس لوٹ گئے ہیں۔

اس رپورٹ کے مطابق شامی فوج نے دیرالزور سے دہشت گردوں کے ساتھ ساتھ بارودی سرنگوں کا بھی صفایا کر دیا ہے جہاں منگل کے روز تین ہزار سے زائد لوگ واپس اپنے گھروں کو پہنچ گئے۔

ریف دمشق میں بیت جن کے علاقے سے بھی دہشت گردوں اور بارودی سرنگوں کا صفایا ہو جانے کے بعد دو دنوں میں پانچ سو گھرانے اپنے گھروں کو واپس لوٹے ہیں۔

بیت جن کے علاقے میں بعض دہشت گردوں نے خود کو شامی فوج کے حوالے کرتے ہوئے اپنے ہتھار بھی ڈال دیئے ہیں۔

شام کے مختلف علاقوں میں دہشت گردوں کی شکست اور شامی فوج کو مسلسل حاصل ہونے والی کامیابیوں کے بعد امن بحال ہو گیا ہے اور مختلف علاقوں کے لوگ اپنے وطن واپس لوٹنا شروع ہو گئے ہیں۔/۹۸۸/ ن۹۴۰

 

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬