02 May 2018 - 13:09
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 435782
فونت
مولانا مقصود ڈومکی:
ایم ڈبلیو ایم جیکب آباد کے زیراہتمام کوئٹہ کے مظلوم شیعیان علیؑ سے اظہار یکجہتی کیلئے جیکب آباد میں احتجاجی کیمپ لگایا گیا۔ احتجاجی مظاہرین نے "دہشتگردی بند کرو" اور "کوئٹہ میں شیعہ ہزارہ کی نسل کشی بند کرو" کے نعرے لگائے۔
حجت الاسلام مقصود علی ڈومکی

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین جیکب آباد کے زیراہتمام کوئٹہ کے مظلوم شیعیان علیؑ سے اظہار یکجہتی کیلئے جیکب آباد میں احتجاجی کیمپ لگایا گیا۔

احتجاجی مظاہرین نے دہشتگردی بند کرو اور کوئٹہ میں شیعہ ہزارہ کی نسل کشی بند کرو کے نعرے لگائے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ کوئٹہ کے مومنین خود کو تنہا نہ سمجھیں، ہم سب ان کے ساتھ ہیں، ہم کوئٹہ کے مظلوم مومنین اور وارثان شہداء کے ساتھ ہیں، احتجاج کے ہر مرحلے میں ان کا ساتھ دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ آرمی چیف کو فی الفور کوئٹہ جانا چاہیئے، ہزارہ اس ملک کے محب وطن اور بہادر شہری ہیں، جن کا مسلسل قتل عام ہو رہا ہے۔

علامہ مقصود ڈومکی نے بتایا کہ چار مئی کو کوئٹہ کے مومنین سے اظہار یکجہتی کیلئے قائد وحدت علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی ہدایت پر سندھ بھر میں بھی بھرپور احتجاج کیا جائے گا ۔

انہوں نے پوری قوم سے اپیل کی کہ وہ مظلومین کوئٹہ کی حمایت کیلئے اپنے گھروں سے باہر نکل آئیں۔

انہوں نے کہا کہ مظلوموں کے حق کیلئے آواز بلند کرنا قابل ستائش عمل ہے ہم امید کرتے ہیں کہ کوئٹہ کے مظلوم شیعیان علیؑ جدوجہد کے اس مرحلے میں سرخرو ہوں گے، مجلس وحدت مسلمین مظلومین کے ساتھ ہے۔

علامہ مقصود ڈومکی نے کہا کہ ہم چیف جسٹس آف پاکستان سے بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ملک بھر میں جاری شیعہ نسل کشی کا ازخود نوٹس لیں، اسّی ہزار شہداء کے ورثا انصاف کا مطالبہ کر رہے ہیں، صورتحال  یہ ہے کہ عدالتوں سے قاتل دہشتگرد باعزت بری ہو جاتے ہیں۔ /۹۸۸/ ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬