08 October 2016 - 23:54
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 423718
فونت
مولانا مبشر حسن:
سرزمین پاکستان کے مشھور مقرر مولانا مبشر حسن نے کہا: محرم الحرام محمدی اسلام کے خلاف بر سر پیکار قوتوں کی بیعت کے انکار کا نام ہے۔
مبشر حسن

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، سرزمین پاکستان کے مشھور مقرر مولانا مبشر حسن مسجد و امام بارگاہ عابدیہ لیاقت آباد میں عشرہ محرم کی مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے کہا: محرم الحرام محمدی اسلام کے خلاف بر سر پیکار قوتوں کی بیعت کے انکار کا نام ہے۔

انہوں نے کہا: ہم پاک فوج کے ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کی حمایت کرتے ہیں لیکن ساتھ ساتھ ایسی بعض قوتیں جو نیشنل ایکشن پلان کو منحرف کرنا چاہتی ہیں اسکی بھی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

مولانا مبشر حسن نے بیان کیا: سرتاج انبیاء خاتم النبین حضرت محمد مصطفیٰ ﷺ نے اپنی رسالت کا کوئی اجر اپنی امت سے طلب نہ کیا مگر یہ کہ امت ان کی آل پاکؑ سے مودت اور محبت کریں، بلا شبہ نواسہ رسول ﷺ سیدالشہداء امام حسین علیہ السلام، حضرت رسول پاک ﷺکے قرابت دار بھی ہیں اور آل عباء کے ایک اہم رکن بھی اور آیۃ مباہلہ کی رو سے فرزند رسول اللہ ﷺ بھی ہیں، لہذا ہر کلمہ گو مسلمان پر امام حسین کی محبت اور ان کے دشمنوں سے نفرت فرض ہے، ماہ محرم وہ مہینہ ہے جس میں نواسہ رسول ﷺ حضرت امام حسین نے یزید جیسے فاسق و فاجر اور بد عقیدہ انسان کی بیعت سے اس لئے انکار کیا چونکہ وہ جس مسند پر براجمان ہوا تھا وہ انبیاء اور انکے معصوم اوصیاء کا منصب تھا۔

انہوں نے کہا: امام حسین جو وارث خاتم الانبیاء ہیں وہ کیسے اتنے بڑے انحراف اور غصب کو برداشت کرتے کہ جس کی بنا پر پورے اسلامی معاشرے کی بنیادیں متزلزل ہو رہی تھیں اور جس کا اثر صرف اس زمانے تک محدود نہ تھا بلکہ تا قیامت بشر، دین مبین اسلام جیسی ابدی نعمت سے محروم ہو جاتا، ماہ محرم الحرام محمدی اسلام کے خلاف بر سر پیکار قوتوں کی بیعت کے انکار کا نام ہے، ہر دور کی یزیدیت کے خلاف حسینیت کے قیام کا مہینہ ہے، محرم الحرام عزاداری سید الشہداء امام حسین ؑ سے تجدید عہد، مودت، محبت اور اظہار وفاداری کا مہینہ ہے۔

مولانا مبشر حسن نے کہا : ملک دشمن تکفیری دہشت گرد اور کالعدم جماعتیں اس ملک کو اندرونی طور پر کمزور کرنے کی اپنی مذموم کو ششوں میں مصروف ہیں، یہ منحوس یزیدی قوتیں ملک کی سالمیت سے کھیل رہی ہیں لیکن پاکستان کا ہر محب وطن شہری ان تکفیری دہشت گردوں سے نفرت کرتا رہا ہے، اس ملک میں شدت پسندوں اور کالعدم تکفیری جماعتوں کی کوئی جگہ نہیں ہے،

انہوں کہا: ہم تمام عزاداروں، ماتمی دستوں، بانیان مجالس، ذاکرین عظام اور علماء کرام کے ساتھ مل کر ان شاء اللہ عزاداری سید الشہداء کو پوری قوت اور طاقت کے ساتھ منائیں گے اور اس راہ میں آنے والی ہر رکاوٹ کو پوری طاقت کے ساتھ دور کریں گے۔/۹۸۸/ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬