10 June 2020 - 13:24
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 442914
فونت
فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ نے چالیس عرب اور اسلامی ملکوں کے سربراہوں کو الگ الگ خط بھیج کر غرب اردن کے بعض علاقوں کو مقبوضہ علاقوں میں ملحق کرنے کی اسرائيل سازش کو ناکام بنانے کا مطالبہ کیا۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ مطابق، صیہونی حکومت، امریکی و صیہونی سازش "سینچری ڈیل" کی بنیاد پر اور ٹرمپ حکومت کی حمایت کے سائے میں پہلی جولائي کو غرب اردن کی تیس فیصد اراضی کو مقبوضہ علاقوں میں شامل کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

فلسطین پریس سینٹر کی رپورٹ کے مطابق اسماعیل ہنیہ نے ان خطوط میں کہا ہے کہ غرب اردن کو مقبوضہ علاقوں میں شامل کرنے کا منصوبہ، فلسطین اور عرب و اسلامی امت کے آج اور کل کے لیے ایک حقیقی خطرہ ہے۔

انھوں نے عرب اور اسلامی ملکوں کے سربراہوں سے کہا ہے کہ وہ غرب اردن اور بیت المقدس کے الحاق کے اس اسرائيلی منصوبے کے خلاف فلسطینیوں کے متحدہ موقف کی حمایت میں ایک سربراہی اجلاس منعقد کریں۔

حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ نے اسی طرح فلسطینیوں کے حقوق کی بحالی، مقبوضہ علاقوں کی آزادی اور بیت المقدس کے دارالحکومت والے ایک خودمختار ملک کی تشکیل کے سلسلے میں فلسطینیوں کے قومی منصوبے کی حمایت کے لیے ماحول سازگار بنانے کی ضرورت پر بھی تاکید کی ہے۔/۹۸۸/ن

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پسندیده خبریں