25 October 2014 - 15:58
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7404
فونت
قائد ملت جعفریہ پاکستان:
رسا نیوز ایجنسی – حجت الاسلام و المسلمین سید ساجد علی نقوی نے سرزمین پاکستان کے سنی عالم دین مولانا فضل الرحمن پر خود کش حملہ کی شدید مذمت کی ۔
حجج سيد ساجد علي نقوي اور عارف حسين واحدي

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، قائد ملت جعفریہ پاکستان حجت الاسلام و المسلمین سید ساجد علی نقوی نے اپنے ارسال کردہ بیانیہ میں سرزمین پاکستان کے سنی عالم دین مولانا فضل الرحمن پر خود کش حملہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔


انہوں ںے یہ کہتے ہوئے کہ ہزارہ برادری پر ہونیوالے حملوں سمیت مختلف واقعات میں معصوم جانوں کا ضیاع قابل افسوس و تشویشناک ہے کہا: عوام عدم تحفظ کا شکار ہیں ، قانون نافذ کرنے والے ادراے عوام کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام نظر آرہے ہیں ۔


قائد ملت جعفریہ پاکستان نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ واقعات کی تحقیقات اور قاتلوں کو بے نقاب کر کے انہیں انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے کہا: محرم سے چند روز قبل دہشت گردی کے واقعات تشویشناک امرہیں، ان واقعات کے بعد اور اس سے پہلے بھی ریاستی عملداری اور ملک کی امن وامان کی صورتحال زیر سوال ہے ۔


انہوں نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ پورا ملک دہشت گردی کی لپیٹ میں ہے ، اس ملک میں دہشت گردوں کے خلاف جتنی بھی کاروائیاں کی جارہی ہیں، نیشنل سیکورٹی پالیسی سے لے کر اب تک جتنے اقدامات دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے کئے گئے ہیں وہ سب ایک لمحہ فکریہ ہیں کہا: کوئٹہ کا واقعہ بڑا سنگین واقعہ ہے ۔ محرم سے پہلے ایسے واقعات کا رونما ہونا ایک تشویشناک امّر ہے ۔ یہ فرقہ وارانہ مسئلہ نہیں اور نہ ہی سنی یا شیعہ اختلاف سے اس کا کوئی تعلق نہیں یہ خالصتاً ایک تجاوز اور کھلی زیادتی ہے اور اس کے سدباب کے لئے ہر ممکن طریقہ سے استفادہ کرنا ضروری ہے۔


حجت الاسلام و المسلمین نقوی نے اس بات کی تاکید کرتے ہوئے کہ اس واقعہ کے بعد اور اس سے پہلے بھی ریاستی عملداری، پوری ریاست اور ملک کی صو رتحال زیر سوال ہے کہا: کراچی سے کوئٹہ اور پارا چنار سے گلگت بلتستان تک پورا ملک جل رہا ہے اس لئے ضروری ہے کہ اس صورتحال کو کنٹرول کرنے کے لئے دہشت گردی کے تدارک کیلئے ٹھوس قدامات جن کی توقع بہت کم ہے اقدامات اٹھائے جائیں ۔۔


دوسری جانب شیعہ علماء کونسل پاکستان کے جنرل سکریٹری نے بھی مولانا فضل الرحمن پر ہونے والے خود کش حملہ کی شدید مذمت کی اور کہا: کوئٹہ میں ہزارہ برادری پر وقفے وقفے سے ہونیوالے دہشت گردانہ حملے تشویشناک ہیں ۔


انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ ایک عرصہ سے یہ سلسلہ جاری ہے جو تھمنے میں نہیں آرہا وفاقی اور صوبائی حکومت بتائے کہ عوام کے تحفظ کیلئے کونسے اقدامات کئے گئے ہیں کہا: صرف مذمتی بیانات اور دعوئوں سے مسائل حل نہیں ہوں گے بلکہ اس سلسلہ میں عملی اقدامات کرنا ہوں گے۔


حجت الاسلام عارف حسین واحدی نے حکومت سے ان واقعات کی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا: حقائق عوام کے سامنے لائے جائیں اور قاتلوں کو کیفر دار تک پہنچایا جائے ۔


آخر میں حجت الاسلام و المسلمین سید ساجد علی نقوی اور حجت الاسلام عارف واحدی نے کوئٹہ میں ہونے والے واقعہ میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر بھی دلی دکھ کا اظہارکرتے ہوئے شہدا کی بلندی درجات اور لواحقین و پسماندگان کو تعزیت و تسلیت و صبر جمیل عطافرمانے کے لئے دعا فرمائی ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬