18 September 2017 - 20:19
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 430004
فونت
بنگلادیش میں دس ہزار سے زیادہ لوگوں نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کے خلاف مظاہرے کئے ہیں۔
بنگلادیش مظاھرہ

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ، بنگلادیش کے دارالحکومت ڈھاکا کی جامع مسجد کے سامنے اکٹھا مظاہرین نے اللہ اکبر اور میانمار حکومت مردہ آباد جیسے نعرے لگائے۔

اس موقع پر پولیس نے شہر ڈھاکا خاص طور سے میانمار کے سفارت خانے کی سیکورٹی بڑھا دی ہے۔
بنگلادیشن کے ایک امدادی ایجنسی نے خبردار کیا ہے کہ روہنگیا پناہ گزیں، دوائیں، کھانے پینے کے سامان اور رہنے کے لئے کوئی ٹھکانہ نہ ہونے کے باعث موت کے دہانے پر پہنچ گئے ہیں۔
اقوام متحدہ کے اعداد و شمار کے مطابق میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف پچیس اگست سے شروع ہونے والے تشدد کی نئی لہر کے بعد اب تک چارلاکھ دس ہزار سے زیادہ پناہ گزیں، بنگلادیش پہنچ چکے ہیں جبکہ چھے ہزار سے زیادہ مسلمان جاں بحق اور آٹھ ہزار زخمی ہوچکے ہیں۔ /۹۸۸/ ن۹۴۰

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬