28 July 2020 - 15:36
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 443297
فونت
ھندوستان:
بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف آواز بلند کرنے پر جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو ) کے ریسرچ اسکالر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

رسا نیوز ایجنسی کی ھندوستانی ذرائع ابلاغ سے رپورٹ کے مطابق، ھندوستانی حکومت نے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف آواز بلند کرنے پر جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو ) کے ریسرچ اسکالر ساجد بن سید کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ایک سوشل ورکر کی شکایت پر ساجد بن سید کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے، جے این یو کے اسکالر نے سوشل میڈیا پر لکھا تھا کہ ھندوستانی فوج کشمیریوں کی منظم نسل کشی کر رہی ہے اور اب عالمی اداروں کی جانب سے کشمیر میں مداخلت کرنے کا وقت آگیا ہے۔

انہوں نے مزید لکھا تھا کہ ھندوستانی حکومت فلسطین کی طرز پر کشمیر میں نسل کشی کی منصوبہ بندی کر رہی ہے لیکن پھر بھی وہ اس میں کامیاب نہیں ہوسکے گی۔

ساجد بن سید نامی اسکالر نے ھندوستانی فوج اور آر ایس ایس پر شدید تنقید کی تھی ۔/

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پسندیده خبریں