‫‫کیٹیگری‬ :
11 May 2013 - 19:23
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 5372
فونت
یوم نکبہ موقع پر؛
رسا نیوز ایجنسی - یوم نکبہ موقع پر فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان نے احتجاجی مہم اور ریلیوں کا آغاز کیا ۔
فلسطين فاؤنڈيشن پاکستان فلسطين



رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جمعیت علماء پاکستان اور فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے زیر اہتمام یوم نکبہ کے عنوان سے جاری ’’ فلسطینیوں کی فلسطین واپسی ‘‘ کی مہم کے حوالے سے میمن مسجد بولٹن مارکیٹ پر بعد نماز جمعہ احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی ۔

 

اس رپورٹ کے مطابق، مظاھرین  ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر فلسطین، فلسطینیوں کا وطن، فلسطینیوں کی فلسطین واپسی، فلسطینیوں ہم تمھارے ساتھ ہیں سمیت امریکہ مردہ باد اور اسرائیل نامنظور جبکہ برطانوی سامراج کے خلاف بھی نعرے درج تھے۔ شرکائے احتجاجی مظاہرہ نے امریکی، اسرائیلی اور برطانوی پرچم کو بھی نذرآتش کیا۔

 

پی ایل ایف کے رہنماؤں نےاحتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے  کہا : فلسطین فلسطینیوں کا وطن ہے اور دنیا کی کوئی طاقت فلسطینیوں کو انکی زمینوں سے دور نہیں کر سکتی۔

 

انہوں نے سنہ 1948ء میں فلسطینیوں کی سرزمین پر ہونے والے صیہونی غاصبانہ تسلط کی شدید مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا : فلسطینیوں کو فلسطین واپس لایا جائے اور غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کے وجود کو غیر قانونی اور غاصب قرار دیا جائے۔

 

 جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی رہنما قاضی احمد نورانی صدیقی، عوامی مسلم لیگ کے رہنما محفوظ یار خان ایڈووکیٹ، فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے مرکزی ترجمان صابر کربلائی سمیت جمعیت علماء پاکستان کے رہنماؤں مولانا شبیر ابو طالب، مولانا شوکت مغل، عبدالوحید یونس، ناصر رضوان ایڈووکیٹ اور علامہ جعفر رضا و دیگر ان نے مظاھرین سے خطاب میں کہا : اقوام عالم فلسطین کی آزادی کے لئے سنجیدہ کردار ادا کرے، اقوام متحدہ امریکی و اسرائیلی دباؤ کو مسترد کرتے ہوئے فلسطینیوں کو ان کا وطن واپس دلوائے۔ فلسطین صرف اور صرف فلسطینیوں کا ہے اسرائیلی غاصبانہ تسلط کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

 

انہوں ںے مزید بیان کیا:  انبیاء علیہم السلام کی سر زمین فلسطین پر غاصب اسرائیل نے 65 سالوں سے غاصبانہ تسلط قائم کر رکھا ہے جبکہ لاکھوں مظلوم اور نہتے فلسطینی اپنے گھروں سے جبری طور پر بے گھر کر دئیے گئے ہیں۔

 

انہوں نے تاکید کی :  غزہ کا علاقہ گذشتہ پانچ برسوں سے اسرائیلی غاصبانہ محاصرے میں ہے اور لاکھوں فلسطینیوں کی زندگیاں خطرے میں ہیں لیکن افسوس ناک اور شرمناک بات تو یہ ہے کہ اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے علمبردار بھی غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کے خلاف آواز اٹھانے سے کتراتے ہیں۔

 

اس  مظاہرے میں سے عالمی عدالت انصاف سے مطالبہ کیا  گیا : امریکہ اور اسرائیل کے خلاف جنگی جرائم کے مقدمات قائم کئے جائیں اور ان کے حکمرانوں کو انصاف کے کٹہرے میں لاکر لاکھوں معصوم انسانوں کے خون کا حسان لیا جائے۔

 

رہنماؤں نے مزید کہا : فلسطینی عوام کو حق حاصل ہے کہ وہ اپنے وطن لوٹ جائیں اور فلسطین فلسطینیوں کا وطن ہے اور دنیا کی کوئی طاقت فلسطینیوں کو انکی زمینوں سے دور نہیں کر سکتی۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬