13 September 2017 - 22:54
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 429936
فونت
پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو میں امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ اس عظیم انسانی المیہ میں انسانی جانوں کے ضیاع کو روکنے کے لیے فوری طور پر بڑے پیمانے پر امدادی سرگرمیاں شروع کرنی چاہئیں، اگر عرب شیوخ امریکہ کے طوفان سے متاثرہ لوگوں پر ۲۷ ملین ڈالر خرچ کر سکتے ہیں تو برما کے مہاجرین پر بھی انہیں دل کھول کر خرچ کرنا چا ہیے۔
سراج الحق

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعظم فوری طور پر بنگلہ دیش اور برما کا دورہ کر کے مظلوم روہنگیا مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کو رکوانے کے لیے عالمی رائے عامہ ہموار کریں اور برما کی حکومت کو مسلمانوں کے قتل عام سے روکنے کے لیے چین کے ذریعے اپنا اثر و رسوخ استعمال کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینیٹ کے اجلاس کے بعد پارلیمنٹ ہاوس کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ہزاروں روہنگیا مسلمانوں کا ظالمانہ قتل عام اور مسلم آبادیوں کو بچوں، بوڑھوں اور خواتین سمیت جلانے کے واقعات نے نوبل انعام یافتہ سان سوچی کے چہرے سے نقاب الٹ دی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر چین اپنا اثرو رسوخ استعمال کرے تو برما کو ظلم و جبر سے روکا جاسکتاہے۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکومت پاکستان کو چین کے ساتھ اپنے تعلقات کو بروئے کار لانا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ عالمی برادری خصوصاً مسلم ممالک کو برما کے مسلمانوں کی حالت زار کی طرف توجہ دینی چاہیے اور اس عظیم انسانی المیہ میں انسانی جانوں کے ضیاع کو روکنے کے لیے فوری طور پر بڑے پیمانے پر امدادی سرگرمیاں شروع کرنی چاہئیں، اگر عرب شیوخ امریکہ کے طوفان سے متاثرہ لوگوں پر 27 ملین ڈالر خرچ کر سکتے ہیں تو برما کے مہاجرین پر بھی انہیں دل کھول کر خرچ کرنا چا ہیے۔ انہوں نے کہاکہ عالم اسلام بنگلہ دیش میں پناہ گزین مسلمانوں کا ساتھ دے اور عالمی برادری کو بھی اس طرف متوجہ کیا جائے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ یو این او کو برما میں بھی یوگوسلاویہ اور یوگنڈا کی طرح کارروائی کرتے ہوئے انسانیت کے خلاف مظالم کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لاناچاہیے۔ انہوں نےحکومت سے مطالبہ کیاکہ پاکستان میں چالیس سال سے دو لاکھ برمی مہاجرین بے وطن شہریوں کی زندگی گزار رہے ہیں، انہیں مستقل شہریت دی جائے۔ دریں اثنا الخدمت فاﺅنڈیشن پاکستان کے صدر میاں عبدالشکور نے اسلام آباد میں امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق سے ملاقات کی اور بنگلہ دیش روہنگیا مسلمانوں کے پناہ گزین کیمپوں کی تفصیلی رپورٹ پیش کی۔ امیر جماعت نے الخدمت فاونڈیشن کی امدادی سرگرمیوں کو سراہا اور میاں عبدالشکور کو ہدایت کی کہ مختلف اسلامی ممالک کے تعاون سے مہاجرین کی مشکلات اور پریشانیوں کو کم کرنے کی کوشش کی جائے۔ امیر جماعت نے میاں عبدالشکور اور سینیٹر طلحہ محمود کو بنگلہ دیش میں برمی مہاجرین کے کیمپوں کا بروقت دورہ کرنے پر زبردست خراج تحسین پیش کیا۔/۹۸۸/ ن۹۴۰

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬