09 March 2014 - 19:29
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 6511
فونت
حجت الاسلام و المسلمین جعفری:
رسا نیوز ایجنسی - مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی جنرل سکریٹری نے اس بات کی تاکید کرتے ہوئے کہ پاکستان کو سعودی عرب اور دیگر عرب ممالک کی ایماء پر امریکی اور صیہونی پالیسوں کا حصہ نہیں بننا چاہئے کہا: 9 مارچ کو ڈیرہ الہ یار اور 16 مارچ کو خیر پور میں ہونے والی لبیک یارسول اللہ کانفرنس شیعہ و سنی اتحاد کا مظہر ہوگی ۔
حجت الاسلام و المسلمين راجہ ناصر عباس جعفري


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی جنرل سکریٹری حجت الاسلام و المسلمین راجہ ناصر عباس جعفری سکھر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا : ملک اور اسلام دشمن دہشت گرد طالبان، پاکستان کے معصوم عوام کا قتل کر رہے ہیں اور حکمران طالبان دہشت گردوں اور عوام کے قاتلوں کو تحفظ دینے میں مصروف عمل ہیں۔


علامہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا کہ اولیاء اللہ کی سرزمین سندھ کے علاقے خیرپور میں سولہ مارچ کو ہونے والی لبیک یارسول اللہ (ص) کانفرنس ملک کی تاریخ میں شیعہ و سنی مسلمانوں کی وحدت کا عظیم الشان مظہر ثابت ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ لبیک یارسول اللہ (ص) کانفرنس میں ملک کی مایہ ناز شخصیات، دانشور، جید علمائے کرام، شہداء کے خانوادوں سمیت اہم ترین شخصیات شرکت کریں گی۔


انہوں نے سکھر انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا : سکھر انتظامیہ بدمعاش اور تکفیری دہشت گرد ٹولوں کی ایماء پر مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی لبیک یارسول اللہ (ص) کانفرنس کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کر رہی ہے، تاہم شیعہ و سنی عوام کا عظیم الشان اجتماع اپنے مقررہ وقت اور تاریخ پر ممتاز گراؤنڈ خیر پور میں منعقد کیا جائے گا اور اگر حکومت نے کسی قسم کی رکاوٹ کھڑی کرنے کی کوشش کی تو سنگین نتائج کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔ 


ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی جنرل سکریٹری نے تھر میں بھوک اور پیاس کی شدت سے جاں بحق ہونے والے معصوم انسانوں کی جانوں کے زیاں کو حکمرانوں کی نااہلی، سستی اور کاہلی قرار دیا اور عوام سے مطالبہ کیا : عوام تھر کے عوام کی مدد کے لئے دل کھول کر عطیات جمع کروائیں اور بھوک اور پیاس کی شدت سے موت اور زندگی کی کشمکش میں پھنسے معصوم انسانوں کی مدد کی جائے۔ 


انہوں نے پاکستان کی خارجہ پالیسی کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا : پاکستان کو سعودی عرب اور دیگر عرب ممالک کی ایماء پر امریکی اور صیہونی پالیسیوں کا حصہ نہیں بننا چاہئے بلکہ پاکستان کو چاہئے کہ شام اور مشرق وسطٰی سے متعلق اپنی سابقہ پالیسی پر کاربند رہے اور امریکی اور اسرائیلی اتحادی سعودی عرب اور دیگر عرب ممالک کی ایماء پر پاکستان کی خارجہ پالیسی کو تبدیل کرنے سے گریز کرے۔


انہوں نے حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہ پاکستان دہشت گردوں کی آماجگاہ بنا ہوا ہے اور ایسے حالات میں دہشت گردوں کی سرپرست حکومتوں کی ایماء پر بنائی جانے والی پالیسی کے باعث دہشت گردوں اور ملک دشمن قوتوں کے حوصلے بلند ہوں گے، جو پاکستان کی بقاء اور سلامتی کے لئے سنگین خطرہ ہے کہا: مورخہ 9 مارچ کو ڈیرہ الہ یار اور 16 مارچ کو خیر پور میں لبیک یارسول اللہ کانفرنس کا انعقاد ملک کی سلامتی اور بقاء اور شیعہ و سنی مسلمانوں کے اتحاد کا عظیم الشان مظہر ہوگا۔


واضح رہے کہ سکھر پریس کلب میں ہونے والی اس پریس کانفرنس میں سندھ کے جنرل سکریٹری حجت الاسلام  مختار احمد امامی، سکریٹری سیاسیات عبداللہ مطہری، ڈپٹی جنرل سکریٹری عالم کربلائی اور سکھر ڈویژن کے جنرل سکریٹری چوہدری اظہر حسن موجود تھے ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬