27 December 2014 - 14:50
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7623
فونت
جے ایس او پاکستان:
رسا نیوز ایجنسی - جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے ڈویژنل صدر سید ارسلان کاظمی نے ایک بیان میں پیشاور اسکول سانحہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا: دہشت گردوں کے خلاف مؤثر اقدامات اور دہشت گردی کی وجوہات کا خاتمہ ضروری ہے ۔
سيد ارسلان کاظمي


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن راولپنڈی پاکستان کے صدر سید ارسلان کاظمی نے ایک بیان میں دہشت گردوں کے خلاف مؤثر اقدامات اور دہشت گردی کی وجوہات کے خاتمہ پر تاکید کی ۔


انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ جہاں سانحہ پشاور پر ساری قوم غمگین ہے  وہیں ہر شخص اب یہ چاہتا ہے کہ دہشت گردوں کے خلاف مؤثر اقدامات کیے جائیں۔ اور پورے ملک کو دہشت گردی کے اس عفریت سے آزاد کروایا جائے کہا: ملک کے مختلف حصے اس وقت نو گو (NO,GO) ایریاز بن چکے ہیں اور ایک عام شہری ان علاقوں میں جانے سے بھی خوفزدہ ہے۔


جے ایس او پاکستان کے ڈویژنل صدر نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ آج جب پوری قوم دہشت گردوں کے خلاف مؤثر اقدامات کے حق میں ہے اور ملک کی تمام چھوٹی ، بڑی اور سیاسی و مذہبی جماعتیں بھرپور اقدامات کے بارے میں متحد ہیں تو اس صورت میں جہاں پاک آرمی کا کردار انتہائی مؤثر ہے وہیں تمام سیاسی جماعتوں کو اس طرف بھی سوچنے کی ضرورت ہے کہ دہشت گردی کی وجوہات کیا ہیں اور ان وجوہات کو کس طرح ختم کیا جائے کہا: ملک میں یکساں نظام تعلیم کا نہ ہونا اور اعلیٰ تعلیم کے باوجود نوجوانوں کی اکثریت کا بے روزگار رہ جانا اس کے بڑے عوامل میں سے ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرتے ہوئے ملک میں یکساں نظام تعلیم کو رائج کیا جائے تا کہ طبقاتی نظام کا خاتمہ ہو اور ہر بچے کو یکساں تعلیمی مواقع میسر آئیں۔ اس سے ملک کی سرکاری تعلیمی سکولوں کی حالت بھی بہتر ہوگی اور تعلیم کا کاروبار کرنے والوں کی بھی حوصلہ شکنی ہوگی۔


انہوں نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ ایک غریب کا بچہ جب انتہائی مشکل حالات کے باوجود پڑھتا ہے اور پھر جب اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے بعد بھی اس کو کوئی مناسب نوکری نہیں ملتی تو وہ دل شکستہ ہو جاتا ہے کہا: حکومت کو چاہئے کہ نئی ملازمتیں نکالے تاکہ ان نوجوانوں کو تعلیم کے بعد فارغ رہنے کا موقع نہ ملے نیز کرپشن کا خاتمہ کر کے میرٹ کو یقینی بنایا جائے۔ کیونکہ پڑھا لکھا نوجوان جب اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے باوجود دیکھتا ہے کہ رشوت دئے بغیر اس کو نوکری نہیں مل رہی اور ایک نالائق نوجوان کو تعلیم کی اعلیٰ ڈگری نہ ہونے کے باوجود سفارش یا رشوت پر نوکری مل جاتی ہے تو اس کے پاس کوئی دوسرا راستہ نہیں رہ جاتا۔ اور وہ پھر ملک دشمن عناصر کے ہاتھ لگ جاتا ہے جو اس قسم کے نوجوان کو آسانی سے اپنی راستے پر لگا لیتے ہیں ۔

کاظمی نے مزید کہا : اس کے علاوہ دیگر وجوہات کو تلاش کر کے ان کو ختم کیا جائے تا کہ دہشت گردی کے اس عفریت پر مستقل بنیادوں پر قابو پایا جا سکے ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬