‫‫کیٹیگری‬ :
24 July 2013 - 14:58
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 5695
فونت
جماعت اسلامی سندھ پاکستان:
رسا نیوز ایجنسی - جماعت اسلامی سندھ کے صدر نے مسئلہ قدس کو عالم اسلام کے لئے حیاتی بتاتے ہوئے کہا: مسئلہ فلسطین کو امام خمینی نے ازسر نو زندہ کیا ۔
ڈاکٹر معراج الہدي? صديقي

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جماعت اسلامی سندھ کے امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے تحت کراچی کے ریڈیو پاکستان آڈیٹوریم میں « فلسطین امت مسلمہ کے اتحاد کا مظہر » کے عنوان سے منعقدہ انٹرنیشنل فلسطین کانفرنس کے شرکاء سے خطاب میں تاکید کی کہ مسئلہ فلسطین کو امام خمینی(رہ) نے ازسر نو زندہ کیا ۔


معراج الہدیٰ صدیقی نے یہ کہتے ہوئے کہ عالمی یوم القدس منانا فکر خمینی(رہ) ہے اور درحقیقت یہی فکر حسینی(ع) ہے جو ہمیشہ ظالم کے خلاف برسرپیکار ہے کہا: میں فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کا شکر گزار ہوں کہ جنہوں نے یہاں نہ صرف اس مسئلے پر اپنی آواز بلند کی بلکہ ہمیں بھی یہ موقع فراہم کیا کہ امت کے اتحاد اور اسرائیل کی نابودی کے لئے اپنی آواز بلند کریں۔


انہوں نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا: جب عالم اسلام متحد ہوتا ہے تو اسرائیل پر لرزہ طاری ہوجاتا ہے، آج عجب بات ہے کہ بی بی زینب(س) کے روضہ پر حملہ ہوا اور امت مسلمہ خاموش ہے، یہ حملہ صرف سنی پر حملہ نہیں ہے اور نہ ہی کسی شیعہ پر حملہ ہے بلکہ یہ حملہ پورے عالم اسلام کے جگر پر حملہ ہے، حضرت زینب(س) کے روضہ پر حملہ کا درد ہر باغیرت مسلمان اپنے دل میں محسوس کر رہا ہے، بی بی زینب(س) کے روضہ پر حملہ فلسطین پر ناجائز قبضہ کرنے والوں کے ایجنٹوں کی کارروائی ہے۔


جماعت اسلامی سندھ کے امیر نے یہ کہتے ہوئے کہ امام خمینی نے پوری امت کو پیغام دیا کہ جمعتہ الوداع کو یوم القدس کے عنوان سے منا کر امریکہ اور اسرائیل کے ظالمانہ اقدام کے خلاف احتجاج کیا جائے کہا: مسئلہ فلسطین کو امام خمینی(رہ) نے ازسر نو زندہ کیا اور یہ امام خمینی کا وعدہ ہے کہ اسرائیل دنیا سے فنا ہو کر رہے گا۔


انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ حق ہمیشہ اس دنیا میں غالب آئے گا اور اسرائیل کی نابودی نزدیک ہے کہا: جو لوگ امت مسلمہ کے اندر دراڑ ڈالنا چاہتے ہے ان کا یہ عمل ڈرون حملوں سے زیادہ خوفناک حملہ ہے لیکن وہ لوگ سن لیں امت مسلمہ متحد ہے اور اپنے دشمن کو اچھی طرح پہچانتی ہے اور ان کی سازشوں کو کبھی کامیاب نہیں ہونے دے گی۔

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬