‫‫کیٹیگری‬ :
05 March 2016 - 12:02
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 9138
فونت
آیت اللہ سید احمد خاتمی:
رسا نیوز ایجنسی – ایران کے دارالحکومت تہران کے امام جمعہ نے چھبیس فروری کے انتخابات میں ایرانی عوام کی وسیع شرکت کو اسلامی جمہوری نظام اور عوام کی کامیابی قراردیا ۔
آيت اللہ سيد احمد خاتمي


رسا نیوز ایجنسی کی رھبر معظم انقلاب اسلامی ایران کی خبر رساں سائٹ سے رپورٹ کے مطابق، ایران کے دارالحکومت تہران کے امام جمعہ آیت اللہ سید احمد خاتمی نے اس ھفتہ نماز جمعہ کے خطبے میں جو سیکڑوں نماز گزاروں کی شرکت میں مصلائے امام خمینی میں منعقد ہوا کہا: چھبیس فروری کے انتخابات میں ایرانی عوام کی وسیع پیمانے پرشرکت ،اسلامی جمہوری نظام کی کامیابی کی نشانی ہے ۔


انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ اسلامی جمہوری نظام ہمیشہ مغربی ملکوں کے ذرائع ابلاغ کے تشہیراتی حملوں کاسامنا کرتارہا ہے کہا: پچھلے ہفتے کے انتخابات میں ایرانی عوام کی بھرپور شرکت، اغیار کی مداخلت کے مقابلے میں ایرانی عوام کی دلیرانہ استقامت و ثابت قدمی تھی ۔


تہران کے امام جمعہ نے پارلیمانی اور مجلس خبرگان کے حالیہ انتخابات میں عوام کی شاندار شرکت کا ذکرکرتے ہوئے کہا : حقیقت تو یہ ہے کہ گذشتہ چھتیس برسوں کے انتخابات میں حقیقی فتح اسلامی جمہوری نظام اور عوام کی ہی ہوئی ہے ۔


انہوں نے دیگرملکوں کے پارلیمانی انتخابات اورایران کے پارلیمانی انتخابات کا موازنہ کرتے ہوئے کہا: حالیہ انتخابات میں ایرانی رائے دہندگان کی باسٹھ فیصد شرکت نے دنیا والوں کو حیرت میں ڈال دیا جبکہ یورپی ملکوں میں پارلیمانی انتخابات میں تیس سے پچاس فیصد ہی ووٹنگ ہوتی ہے ۔


آیت اللہ سید احمد خاتمی نے اسلامی انقلاب کو نقصان پہنچانے کی عالمی طاقتوں کی کوششوں کا ذکرکرتے ہوئے کہا: ان طاقتوں اور ان کے آلہ کاروں کو یہ جان لینا چاہئے کہ ایران کا اسلامی جمہوری نظام بنیادی آئین کے تحت ہی چلایا جاتاہے اور اس کی بنیادی اسٹریٹیجی اور اصولوں میں کبھی بھی تبدیلی نہیں آئے گی ۔


انہوں نے حزب اللہ کو دہشت گرد قراردینے کے تعلق سے خلیج فارس تعاون کونسل کے تازہ بیان کے ردعمل میں کہا : خلیج فارس تعاون کونسل کی حکومتیں، صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات برقرارکرنے کی کوشش کررہی ہیں اور وہ غاصب صیہونی حکومت کی پالیسیوں کے تحت ہی کام کرتی ہیں ۔


تہران کے امام جمعہ نے یہ کہتے ہوئے کہ خلیج فارس تعاون کونسل کی حکومتیں امریکا اور صیہونی حکومت کے مفادات کے لئے کام کرتی ہیں جو خود ان عرب ملکوں کے لئے نقصان دہ ہے کہا : ان حکومتوں کے اس قسم کے اقدامات سے خود ان کے ہی ملکوں کے لئے خطرناک نتائج سامنے آئیں گے اور علاقے کے عوام ان حکومتوں کے سربراہوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں گے ۔


انہوں نے لبنان کی سیکورٹی اور سلامتی کو حزب اللہ کی مرہون منت قراردیا اور کہا : اسلامی جمہوریہ ایران غاصب صیہونی حکومت کے مقابلے میں لبنان کی اسلامی مزاحمتی تحریک کی بھرپور حمایت جاری رکھے گا ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬