10 March 2010 - 21:46
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 1066
فونت
درس خارج فقه ميں عنوان کيا:
رسا نيوزايجنسي - حضرت آيت الله مکارم شيرازي نے اج صبح درس خارج فقه کےآغازميں بيگا نےميڈيا ميں مرجعيت کے خلاف افواہ پھيلائےجانے کے سلسلے ميں شديد تنقيد کي .
آيت الله مکارم شيرازي

 

رسا نيوزايجنسي کے رپورٹرکي رپورٹ کے مطابق ، قم کےمراجع تقليد ميں سے حضرت آيت الله ناصر مکارم شيرازي نے اج اپنے درس خارج فقه کي ابتداء ميں جو مسجد اعظم قم ميں منعقد ہوا معاشرے ميں مرجعيت کے خلاف افواہ ئےجانے کے سلسلے ميں شديد تنقيد کرتےہوئے کہا : ان دنوں ميڈيا ميں اخلاص نہ ہونے کي بناء پر جسے دنيا کےگوشه و کنار ميں ديکھا جاسکتا ہے کچھ لوگ افواہ پھيلا کراسي پر تکيہ کرتے ہيں.

           

اس مرجع تقليد نے کہا : وہ جو افواہيں بناتا ہےاورجوافواہوں کوپھيلاتا ہے اور اسي طرح انکھ بند کرکےان افواہوں کو ماننے والا تينوں مجرم ہيں .

 

حضرت آيت الله مکارم شيرازي نے افواہ کو دشمن کي فکري جنگ  بيان کرتے ہوئے تاکيد کي : منافقوں نے ميں مرسل اعظم (ص) کے زمانے ميں بھي اپ کے ساتھ يہي کيا کہ قران کريم نےبھي مختلف ايات ميں اس دستان افک کي جانب اشارہ کيا ہے  .

 

انہوں نے منافقوں اوردشمنوں کي جانب سے حضرت محمد (ص) کے سلسلے ميں افواہ پھيلائے جانے کے سلسلے ميں کہا : اگر منافقوں نے افواہ بنائي تودوسرے اسےنہ پھلا ئيں اوراسي طرح معاشرہ اسے ھرگز نہ مانے .

 
انہوں نے مرجعيت کو مقدس بيان کرتے ہوئے کہا : مرجعيت زمان غيبت کبري سے اج تک عوام کي حامي اور انکي خادم رہي ہے  .

 

حضرت آيت الله مکارم شيرازي نے واضح طور پر کہا : مرجعيت نے سياسي مسائل ميں کافي خدمتيں کي ہيں اوراج بھي نظام ورھبر معظم کي خدمت ميں ہے .

 

انہوں نے تاکيد کي : مرجعيت کےمقدس مرکزکو ائندہ اورمشکل وقت کے لئے محفوظ رکھيں کيوں کہ يہ مرکز ملک کے استقلال اورعوام کي پناگاہ ہے لھذا مرجعيت کے سلسلے ميں سبھي دشمن کي سازش اورافواہ کي جانب متوجہ رہيں .

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬