30 August 2009 - 15:04
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 197
فونت
شيخ نعيم قاسم :
رسا نيوز ايجنسي - شيخ نعيم قاسم نے تاکيد کرتے ہوئے کہ عالمي کونسل يااميريکہ سے مدد لينے کے بجائے مقاومت اور مقابلہ مشکل کا تنھا حل ،کہا : حزب الله کي ھر ميدان ميں کاميابي حضرت امام خميني کي تعليمات سے متمسک ہونےکي بناء پر ہے .
شيخ نعيم قاسم

رسا نوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، شيخ نعيم قاسم حزب الله لبنان کے جنرل سکريٹري نے دمشق ميں مقاومت اسلامي کي حمايت کرنے والے گروپ سےافطار کے پروگرام ميں ، فلسطيں کي ازادي کے سلسلے ميں عالمي کونسل اوراميريکہ کے ناکام ہونے کي جانب اشارہ کرتے ہووئے کہا : جرمن نے نے ديگر استکبار طاقتوں کے ساتھ ، اسرائيل کو منطقہ ميں وجود ديا اور اميريکا نےاس کي حمايت کي تاکہ اعراب کي انکھوں کانٹا اور گردن پر گرز گراں  رہے تاکہ اپني استکباري سياست کا قلادہ انکي گردن ميں ڈال سکيں .
 

انہوں نے صهيونيسم کے وجود ميں لانے والوں سے ، فلسطين کي ازادي کے سلسلے ميں حمايت کے طالب ہونے کوسراب کے مانند بتايا اورکہا : عالمي کونسل جو ھر روز فلسطينيوں کے مارے جانے اور قتل کئے جانے، انکے خانہ اور کاشنہ کے چھننے کي شاھد ہے مگر اف بھي نہي کرتي، کيا ھم اسے ان بے گھروں کے مکانات کے واپس کرانے کي توقع رکھ سکتے ہيں؟  
  

انہوں نے دشمن سے حالات کو بہتر بنائے جانے کامقصد مقاومت کے ميدان ميںفلسطينيوں کوبے يار ومددگار اور يک وتنھا کرنا بيان کيا اور تاکيد کي جبکہ اعراب سے خير کي اميد نہي ہےان چاہيں کہ شر بپا نہ کريں.
  

شيخ نعيم قاسم نے اس اشارہ کے ساتھ کہ گزشتہ گرمي 2006 ميں مقاومت کي بڑي کاميابي اور کانڈوليزا رايس اميريکا کي سابق وزيرخارجه کي نئے خاور ميانہ کے سلسلےميں ھار،  مقاومت کو تنھا راه حل بيان کرتے ہوئے کہا :  مقاومت اسلامي نے ملت فلسطين اور اعراب کے عزم و اراده کو استوار کر ديااور انہيں اميد دي کہ فلسطين کاباقي حصہ بھي ازاد کرليں .
 

انہوں نے حزب الله کے دلاوروں کي کاميابي کا راز ، صبر، استقامت ا ور حضرت امام خميني کي تعليمات پہ ايمان بتاتے ہوئے کہا : يہ کاميابي امت اسلامي کي عزت اور بزرگي کا سبب ہوئي ، فلسطيني مبارزوں کے لئے نمونہ عمل قرار پائي تاکہ غزه کي جنگ ميں کامياب اور صهيونيسم کے تجاوز کے مقابلہ ميں مقاومت کريں  .

 

شيخ نعيم قاسم حزب الله لبنان کے جنرل سکريٹري نے سوريه ا ور لبنان کي ايک دوسرے سے ضرورت اور دوستانه روابط پہ تاکيد کرتے ہوئے کہا: منطقه کے ممالک کا اپسي رابطہ مشترکہ منافع کے تامين اوردشمن کي استکباري سازش سے مقابلہ ميں مفيد ہے .


تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬