11 January 2011 - 17:43
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2277
فونت
آيت‌الله مکارم شيرازي :
رسا نيوزايجنسي - حضرت آيت‌الله مکارم شيرازي نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ ملک ميں اس وقت دو نظام ايک حوزہ کا قديم نظام اوردوسرا يونيورسٹي کا نظام موجود ہے کہا : ھم پر لازم ہے کہ حوزہ علميہ کے قديم طريقے کا تحفظ کريں اوريونيورسٹي کے نظام ميں گم نہ ہوجائيں اچھائيوں کو يونيورسٹي سے ليں مگر خود کو نہ کر بيٹھيں ?
آيت الله مکارم شيرازي

رسا نيوزايجنسي کے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق ، مراجع تقليد ميں سے حضرت آيت‌الله ناصر مکارم شيرازي نے کل شام تحقيقي وتعليمي انجمنوں ملاقات ميں کہا : الحمد للہ شيعہ حوزات ھميشہ پر بار رہيں ہيں اور در حال حاضر اسلامي دنيا ميں حرف اول کہنے والے بھي يہي حوزات ہيں ?

انہوں نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ حوزہ علميہ قم کے محصولات دنيا کے تمام ديني مراکز ميں بالاترہيں کہا : ھمارے پاس ھمارے بزرگان کي علمي ميراث ہے اور توقع ہے کہ اس کي حفاظت اچھي طرح کريں ?

اس مرجع تقليد نے کہا : بزرگان کي بيان کردہ باتوں پر اکتفاء نہ کريں بلکہ اس ميں مزيد اضافہ کرنے کي کوشش ميں رہيں تاکہ يہ ميراث روز بہ روز غني ترہوتي رہے کيوں خاتميت فقط نبوت کے لئے معني دار ہے علمي دنيا ميں کوئي خاتميت موجود نہي ?

انہوں نے مزکيد کہا : علم نامحدود ہے خصوصا الھي علوم کہ خدا وند متعال سے مربوط ہے اور وہ ايک لامتناھي ذات ہے لذا اس کا علم بھي لامتناھي ہے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬